دیکھتے ہی دیکھتے 3.2 ارب ڈالر کی ہاٹ منی میں کی گئی سرمایہ کاری میں سے 1.7 ارب ڈالر نکل کر بیرونِ ملک منتقل ہوگئے

mirza ikthiar baig urdu columnist urdu writer

میں نے اپنے گزشتہ کئی کالموں میں کورونا وائرس میں ملکی معاشی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پالیسی میکرز کو مشورہ دیا تھا کہ وہ اسٹیٹ بینک کے پالیسی ریٹ میں کمی اور تیل کی گرتی ہوئی قیمتوں کا فائدہ صارفین کو منتقل کریں جس سے افراطِ زر یعنی مہنگائی میں کمی اور ملکی قرضوں پر مزید پڑھیں