وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال بھی وفاقی حکومت کو شکایتی خطوط لکھنے لگے

عام طور پر جب کوئی حکومتی عہدیدار کسی دوسرے حکومتی عہدیدار کو خط لکھتا ہے اور شکایت کا اظہار کرتا ہے تو سمجھا جاتا ہے کہ دونوں کے درمیان تعلقات کشیدہ ہو چکے ہیں اور صورتحال خراب ہو رہی ہے آنے والے دنوں میں دونوں کے سیاسی راستے مزید فاصلے پر جاسکتے ہیں ۔پاکستان کی سیاسی تاریخ ایسے خطوط سے بھری پڑی ہے جو صدر نے وزیراعظم کو لکھے یا مختلف صوبوں کے وزیراعلیٰ کی جانب سے وفاقی حکومت کو لکھے گئے۔موجودہ دور میں سندھ کے وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ وزیر اعظم اور وفاقی حکومت کو خطوط لکھنے کے معاملے میں سب سے آگے ہیں ۔وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے موجودہ وزیراعظم عمران خان اور نئے وزیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ اور سابقہ وزیر خزانہ اسد عمر کو خطوط لکھ کر اپنے صوبے کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں اور مسائل کا ذکر کیا اور وفاقی حکومت سے این ایف سی ایوارڈ اور صوبے کے حقوق نہ ملنے اور فنڈز کی ادائیگی میں رکاوٹوں اور تاخیر پر گلے شکوے کیے اسی طرح موجودہ وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو بھی اپنے صوبے کے مسائل سے آگاہ رکھنے کے لیے خطوط لکھے۔اب بلوچستان کے موجودہ وزیر اعلیٰ جام کمال بھی وفاقی حکومت کو خطوط لکھ کر شکایتیں درج کرانے اور تحریری مطالبہ سامنے والی شخصیات میں شامل ہوگئے ہیں۔


بلوچستان کے وزیر سردار عبدالرحمان کھیتران کے حوالے سے یہ انکشاف سامنے آیا ہے کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال نے وفاقی حکومت کو خط لکھ کر کیسکو چیف کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ کردیا ہے بلوچستان اسمبلی کے اجلاس میں اراکین اسمبلی صوبے کے ذرعی علاقوں میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کرنے پر کیسکو چیف پر برس پڑے اراکین نے موجودہ کیسکو چیف کوعہدے سے فوری طور پر ہٹانے کا مطالبہ کیا بلوچستان اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر سردار بابر موسیٰ خیل کی زیر صدارت ہوا جس کے دوران جمیعت علماء اسلام ف کے رکن اسمبلی عبدالعزیز زہری نے نقطہ دراز پر بتایا کہ صوبے کے زرعی علاقوں میں طویل لوڈشیڈنگ سے فصلیں تباہ ہو رہی ہیں فوری طور پر کیسکو چیف کو تبدیل کیا جائے اس موقع پر صوبائی وزیر سردار عبدالرحمان کھیتران نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال نے کیسکو چیف کو اٹھانے کے لئے وفاقی حکومت کو خط لکھ دیا ہے ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وزیر اعلی نے نئے کیسکو چیف کے لیے بلوچستان سے تعلق رکھنے والے ایک افسر کا نام بھی دیا ہے امید ہے کہ موجودہ کیسکو چیف کو جلد ہٹا دیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں