پیپلز پارٹی کے لیے بری خبر ۔ سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف سابق سیکرٹری پانی و بجلی شاہد رفیع وعدہ معاف گواہ بن گئے

پاکستان پیپلزپارٹی کے حامیوں کے لیے ایک بری خبر آئی ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف رینٹل پاور کیس کے حوالے سے نیب اور تفتیش کاروں کو اہم کامیابی حاصل ہو گئی ہے نیب نے سابق سیکرٹری پانی و بجلی شاہد رفیع کو گرفتار کرکے پوچھ گچھ اور سارے کیس کے بارے میں چھان بین کی ۔اس وقت اہم کامیابی حاصل ہوئی جب سابق سیکرٹری پانی و بجلی شاہد رفیق وعدہ معاف گواہ بننے کے لئے راضی ہوگئے انہوں نے اعترافی بیان قلمبند کرانے اور سب حقائق بتانے پر رضامندی ظاہر کردی احتساب عدالت نے شاید رفیق کو وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست منظور کرلی نیب تفتیشی افسر کے مطابق وعدہ معاف گواہ بنانے کے لیے چیئرمین نیب نے درخواست بھی منظور کرلی ہے سابق سیکرٹری پانی و بجلی شاید حسین نے سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کے حوالے سے بیان قلمبند کرانے پر رضامندی ظاہر کی ہے اور انہیں وعدہ معاف گواہ کی حیثیت دے دی گئی ہے ۔


اس کے علاوہ نیب نے کار کے اسکینڈل میں گرفتار ملزم لائق احمد کے حوالے سے بھی اہم پیش کرتی ہے لئیق احمد نے دس لاکھ درہم رشوت لینے کا اعتراف کرلیا ہے اور آزاد کشمیر کے سابق صدر راجہ ذوالقرنین کے بیٹے بابر ذوالقرنین کے حوالے سے اہم انکشافات کیے ہیں نیب کا کہنا ہے کہ ملزم لائق احمد نے بیٹی کے ذریعے مرکزی کردار بابر ذوالقرنین سے رقم وصول کی کار کے رینٹل کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے نیب کی درخواست منظور کرتے ہوئے ملزم لائک احمد کا 8 مئی تک جسمانی ریمانڈ منظورکرلیا اور اسے آئندہ سماعت پر دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں