سندھ تقسیم ہوگا نہ گورنر راج لگے گا

کراچی- سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا ہے کہ عوام بے فکر رہیں سندھ تقسیم ہو گا نہ سندھ میں گورنر راج لگ سکے گا ریلوے میں 35 سال سے ریفرینڈم نہ کرنا افسوس کی بات ہےریفرینڈم مزدوروں کا بنیادی حق ہے۔ وہ بدھ کو ریلوے ورکرز یونین کے تحت کینٹ اسٹیشن پر منعقدہ جلسے سے خطاب کررہے تھے جلسہ سے ورکرز یونین کے چیئرمین منظور رضی اور سیکریٹری جنرل نسیم راؤ و دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ سینیٹر میاں رضا ربانی کا کہنا تھا کہ ہم شکاگو کے شہداء کو سرخ سلام پیش کرتے ہیں شکاگو کے شہداء کی قربانیوں کی وجہ سے مزدور تحریک آگے بڑھ رہی ہے سینیٹر رضا ربانی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے سرمایہ داروں اور جاگیر داروں اشرافیہ کا ہمیشہ سے گٹھ جوڑ رہا ضیا الحق کے دور میں طلباء تنظیموں پر پابندی لگا کر ٹریڈ یونین کو ٹکڑے ٹکڑے کیا جائے مزدور تنظیموں کو کمزور سے کمزور کرنے کی سازشیں کی گئیں۔


سینیٹر رضا ربانی نے مزید کہا کل اب وہ وقت آ گیا ہے جب نظام کی تبدیلی کے لئے مزدور ایک ہو جائیں ہم جانتے ہیں کس طرح جمہوری قوتوں کو تقسیم کیا جا رہا ہے۔ عوام بے فکر رہیں نہ سندھ تقسیم ہو گا نہ سندھ میں گورنر راج لگ سکے گا۔ سینیٹر رضا ربانی کا کہنا تھا کہ آج مہنگائی آسمان کو چھو رہی ہےحکمرانوں نے تو مہنگائی ختم کرنے کا دعویٰ کیا تھا آج مزدور کی بات چھوڑ دیں لوئر مڈل کلاس کا آدمی گذر بسر نہیں کر سکتا آئی ایم ایف کے کہنے پر بجلی اور گیس کی قیمتیں بڑھائیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک بار پھر پیٹرول کی قیمتیں بڑھانے کی باتیں ہو رہی ہیں آج وزیر اعظم کی کابینہ میں باہر سے آئے ہوئے ہیں نیا وزیر خزانہ بین الاقوامی مالیاتی اداروں کا ایجنٹ بن کر ہماری حکومت میں بھی کام کرتا رہا سینیٹر رضا ربانی نے کہا کہ شاید اتنی استعداد نہیں کہ ریاست سے ٹکرا جاؤں ریلوے میں 35 سال سےنہ کرنا افسوس کی بات ہےریفرینڈم مزدوروں کا بنیادی حق ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں