کرونا وائرس میں پولیو ورکرز اپنی جان ہتھیلی پر لے کر لوگوں کے بچوں کو بچانے نکلے ہیں ان کے ساتھ بھرپور تعاون کریں

کرونا وائرس میں پولیو ورکرز اپنی جان ہتھیلی پر لے کر لوگوں کے بچوں کو بچانے نکلے ہیں ان کے ساتھ بھرپور تعاون کریں

وزیر صحت سندھ و بہبود آبادی ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو نے کراچی میں پولیو مہم کا افتتاح کردیا، پولیو مہم دوران سندھ بھر میں نوے لاکھ بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے جس میں سے کراچی میں رہائش پذیر بچوں کی تعداد 20 لاکھ سے زائد ہے، اس موقع پر وزیر صحت کے ہمراہ ای او سی کی کور ٹیم کے ممبران اور ڈی ایچ او ساؤتھ ڈاکٹر راج کمار بھی موجود تھے، انہوں نے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے اور ان میں گفٹ بھی تقسیم کئے، اس موقع پر وزیر صحت کا کہنا تھا کہ والدین سے گزارش ہے کہ اس مہم کے دوران اپنے پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلائیں اور انہیں عمر بھر کی معذوری سے بچائیں، ایمرجنسی آپریشن سنٹر برائے پولیو سندھ کی جانب سے سندھ بھر میں 11 جنوری سے 17 جنوری2021 تک پولیو مہم چلائی جائے گی، اس مہم میں سندھ کے 29 اضلاع میں 90 لاکھ 5 سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے، ان میں سے 20 لاکھ سے زیادہ بچے کراچی میں مقیم ہیں، 6 ماہ سے 59 ماہ تک کے بچوں کو وائٹمن A بھی دی جائے

گی، اس مہم کے دوران WHO کی جانب سے کورونا وائرس سے بچاؤ کی تمام احتیاطی تدابیر پر عمل کیا جائے گا جس میں پولیو ورکرز کا ماسک پہننا اور تعیناتی سے قبل بخار چیک کرانا، بچوں کو براہ راست نہ سنبھالنا، گھروں میں داخل نہ ہونا، اہل خانہ کے ساتھ محدود وقت گزارنا اور قلم یا کہنی کے ساتھ دروازے پر کھٹکھٹانا شامل ہیں۔