سری لنکا … 24 افراد گرفتار … ہلاکتیں 290 ہوگئیں

ایسٹر کے تہوار پر سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو اور دیگر مقامات پر ہونے والے بم دھماکوں میں ہلاکتوں کی تعداد دو سو نوے تک پہنچ گئی ہے جبکہ 500 سے زائد افراد زخمی بتائے گئے ہیں ملک بھر میں سوگ۔ ہر شخص غمگین اور غصے میں ہے۔ پولیس نے چوبیس افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ دہشت گردوں نے کولمبو سمیت چار شہروں میں آٹھ دھماکے کئے جن میں گرجا گھروں اور فائیو سٹار ہوٹلوں کو نشانہ بنایا گیا بڑی تعداد میں غیر ملکی افراد بھی ان دھماکوں میں ہلاک اور زخمی ہوئے ہلاک ہونے والوں میں ابتدائی طور پر 35 غیر ملکیوں کی شناخت ہوئی جن میں پانچ برطانوی تین بھارتی جبکہ ڈنمارک ترکی اور چین کے دو دو اور نیدرلینڈ اور پرتگال کا ایک ایک شہری شامل ہے۔ پولیس کو دھماکوں کے بعد کولمبو کے ایئرپورٹ کے قریب ایک پائپ بم بھی برآمد ہوا جسے ناکارہ بنا دیا گیا پولیس کے مطابق آٹھ دھماکوں میں کم از کم دو خود کش حملے تھے پولیس نے چوبیس افراد کو گرفتار کیا ہے جن کو شبہ ہے کہ وہ ان دھماکوں میں ملوث ہو سکتے ہیں یہ تمام افراد مقامی ہیں اور حملہ آوروں کے ممکنہ غیر ملکی رابطوں کے بارے میں تحقیقات میں مدد گار ثابت ہو سکتے ہیں دھماکوں کے فورا بعد کولمبو میں کرفیو لگا دیا گیا تھا جسے پیر کو ہٹا دیا گیا پاکستان سمیت کئی ملکوں کی جانب سے دہشت گردی کے ان واقعات کی پرزور مذمت کی گئی اور افسوس کا اظہار کیا گیا جبکہ سوگ میں پیرس کے ایفل ٹاور کی روشنیاں بجھا دی گئی پاکستانی کرکٹرز سمیت دنیا بھر کے کھلاڑیوں نے بھی سری لنکا کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے اور ان واقعات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے پاکستانی کھلاڑیوں شاہد آفریدی رمیز راجہ اور کپتان سرفراز احمد نے ان واقعات پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے سری لنکا کے عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے ویسٹ انڈیز کے گریٹ کرکٹر سر ویون رچرڈ نے بھی آپ نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے لنکن عوام سے کہا ہے کہ بہادری سے صورت حال کا سامنا کرتے رہنا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں