کوئٹہ سریاب میں ریڈیو اسٹیشن کی خالی 64 ایکڑ سے زائد زمین پر کینسر ہسپتال کا قیام عمل میں لایا جائے، سردار اختر جان مینگ

اسلام آباد – بلوچستان نیشنل پارٹی کے چھ نکات پر عملدرآمد کے حوالے سے اہم اجلاس وزیراعظم سیکرٹریٹ اسلام آباد میں منعقد ہوا جس میں بلوچستان نیشنل پارٹی کے قائد سردار اختر جان مینگل ‘ مرکزی سیکرٹری جنرل سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی ‘ مرکزی سیکرٹری اطلاعات آغا حسن بلوچ ‘ مرکزی رہنماء ایم این اے حاجی ہاشم نوتیزئی ‘ مرکزی رہنماء و ایم پی اے ثناء بلوچ نے وزیراعظم سیکرٹریٹ میں تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء جہانگیر خان ترین ‘ وزیراعظم کے معاون خصوصی ارباب شہزاد ‘ وفاقی وزراء خسرو بختیار ‘ عمر ایوب اور مختلف محکموں کے سیکرٹریز و اعلیٰ حکام نے شرکت کی اجلاس میں بی این پی کے چھ نکات پر عملدرآمد ‘ بلوچستان میں ترقیاتی سکیموں ‘ بجلی‘ سڑکوں‘ ڈیمز ‘ آبنوشی ٹیوب ویلز کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے سمیت دیگر اہم امور پر سیرحاصل بحث کی گئی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ رواں مالی سال کے پی ایس ڈی پی بجٹ میں بلوچستان کیلئے زیادہ بجٹ مختص کی جائیں گے تاکہ بلوچستان کی محرومی میں کسی حد تک کمی لائی جا سکے پارٹی قائد سردار اختر جان مینگل نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں بلوچستان کو نظر انداز ہی کیا جاتا رہا وفاقی حکومت بلوچستان کو ترجیح دے بلوچستان میں انفراسٹرکچر ‘ سڑکیں جدید طرز پر نہ ہونے کی وجہ سے آئے روز قومی شاہراﺅں پر حادثات رونما ہو رہے ہیں اس حوالے سے فوری اقدامات کئے جائیں اور مرحلہ وار قومی شاہراﺅں کو دو رویہ کیا جائے بلوچستان میں پانی کی سطح خطرناک حد تک گر چکی ہے ڈیلے ایکشن ڈیمز کی مختلف علاقوں میں بنائے جائیں سردار اختر جان مینگل نے یہ تجویز بھی دی کہ کوئٹہ سریاب میں ریڈیو اسٹیشن کی خالی 64ایکڑ سے زائد زمین پر کینسر ہسپتال ‘سپورٹس کمپلیکس کا قیام عمل لایا جائے تاکہ کینسر ہسپتال کے قیام کا جو عوامی مطالبہ ہے وہ پورا ہو سکے انہوں نے امید ظاہر کی کہ رواں مالی سال کے بجٹ میں بلوچستان کے مسائل کو مد نظر رکھتے ہوئے کثیر فنڈز مختص کئے جائیں گے تاکہ بلوچستان کے مسائل کسی حد تک حل ہو سکیں اجلاس میں کہا گیا ہے کہ بلوچستان کو درپیش توانائی بحران سے نکالنے کیلئے بھی اقدامات کئے جائیں ہزاروں ٹیوب ویلز کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جائے گا تاکہ زمینداروں کی کسی حد تک داد رسی ہو سکے اسی طرح بلوچستان کے مختلف گرڈ اسٹیشنز کو اپ گریڈ کیا جائے تاکہ عوام کو بجلی کے حوالے سے جو مشکلات درپیش ہیں حل ہو سکیں اجلاس میں پارٹی کے چھ نکات پر بھی غور کیا گیا پی ٹی آئی کے مرکزی قیادت اور وزراءنے یقین دہانی کرائی کہ بلوچستان نیشنل پارٹی کے نکات پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے گا رواں پی ایس ڈی پی میں ڈیمز ‘ بجلی ‘سڑکوں کی تعمیر سمیت دیگر ترقیاتی منصوبوں کیلئے فنڈز مختص کئے جائیں گے وفاق بلوچستان کو مختلف شعبوں میں ترقیاتی دینے کیلئے اقدامات کو یقینی بنائے گی.