آئین میں تبدیلی یا اٹھارویں ترمیم کا خاتمہ صرف پارلیمنٹ کی دوتہائی اکثریت سے ہو سکتا ہے ۔ پیر سید صدرالدین شاہ راشدی

کراچی ۔ پاکستان مسلم لیگ فنکشنل کے ہوتے ہوئے سندھ کا کسی صورت میں بٹوارہ نہی ہوسکتا ۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ فنکشنل سندہ کے صدر پیر سید صدرالدین شاہ راشدی نے اپنی صدارت میں ہونے والے فنکشنل لیگ کے ایک اعلی سطحی اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اجلاس میں فنکشنل لیگ سندہ کے جنرل سیکریٹری سردار عبدالرحیم ۔کاشف نظامانی۔عبدالکریم شیخ۔عبدالکریم شر۔سردار محمد صادق کھوسو۔بئریسٹر ارشد شر نے شرکت کی اجلاس میں فیصلا کیا گیا کے ضلعی سطح پر جاکر تنظیمی عمل کو مذید مظبوط کیا جائے گا ۔ پیر سید صدرالدین شاہ راشدی نے مذید کہا کے اپوزیشن کا شور صرف نیب اور ایف آئی ای کو اپنا آئینی کردار ادا کرنے سے روکنے کے لیے ہے ۔ان کا الزام کہ وفاقی حکومت اٹھارویں ترمیم کو ختم کررہی ہے۔اٹھارویں ترمیم کو ختم کرنے بات میں نہ حقیقت ہے اور نہ اس میں وزن ہے۔انہون نے مزید کہا کہ جن کو سندھ کارڈ کیلنے کا شوق ہے ان کو چاہیے کے سندہ اور سندہ کے عوام کی خدمت کرے۔پیر سید صدرالدین شاہ راشدی نے مزید کہا کے سندھ کو باٹنے کی باتیں بی معنی اور خیالی ہے ۔فنکشنل لیگ کے ہوتے ہوئے سندھ کا کسی صورت میں بٹوارہ نہی ہوسکتا ۔پیر سید صدرالدین شاہ راشدی نے جی ڈی اے کو سندھ کی متبادل قیادت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ کا سیاسی مستقبل جی ڈی ای ہے۔انہون کہا کہ فنکشنل لیگ اور جی ڈی اے کو آئیندہ بلدیاتی انتخابات میں بہرپور کامیابی کے لیے تنظیم سازی مکمل کی جائے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں