ھےکوئی جواب

ھےکوئی جواب


29 نومبر2019ء کو افشاں لطیف کے کاشانہ میں یتیم بچیوں کے جنسی کاروبار کو منظر عام پر لانے

کے بعد 17دسمبر2019ء کو لاھور ہائیکورٹ میں جانے کے اعلان کے بعد 16 دسمبر 2019ء کو ان واقعات

کی اہم گواہ کائنات کو اسکے سسرال سے اغواء کروایا گیا۔ اسکو اغواء اور قتل کرنے

والے چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے وسیمCPO،حاجرہ آیا، عمران ASIتھانہ باغبانپورہ سے تحقیقاتی کمیٹیوں کی تفشیش اور راجہ بشارت کے خلاف رپورٹس آنے پر کائنات کے شوہرعابدثناءاللہ سمیت سب کو بھگایا کیوں ھواھے۔