ایکسائز پولیس چیک پوسٹس صرف مشکوک گاڑیوں کی چیکنگ کے لئے ہیں۔ مکیش کمار چاو ¿لہ

چیک پوسٹوں پر تعینات عملہ گاڑیوں کے کاغذات اور ٹیکس چیک کرنے کا مجاز نہیں ہے۔
صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات
کراچی21 اکتوبر۔ صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاو ¿لہ نے ایکسائز پولیس افسران اور اہلکاروں کو عام شاہراہوں اور ہائی ویز پر گاڑیوں کی غیر مجاز جانچ پڑتال کرنے سے سختی سے منع کردیا ہے


کیونکہ یہ غیرضروری عمل ہے اور اس کی فوری حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے۔ یہ بات انہوں نے محکمہ سندھ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و محکمہ انسداد منشیات کے تمام ریجنل ڈائریکٹرز کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایکسائز چیک پوسٹیں صرف منشیات کے لئے مشکوک گاڑیوں کی جانچ پڑتال کی مجاز ہیں اور ان چیک پوسٹوں پر تعینات عملے کو دستاویزات / موٹر وہیکل ٹیکس چیک کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ ایکسائز اسٹاف کے ذریعہ گاڑیوں کے کاغذات کی ہراساں کرنے اور غیر مجاز / غیرضروری جانچ پڑتال کے سلسلے میں متعدد شکایات موصول ہوئی ہیں جو ناقابل برداشت ہیں۔صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور

مکیش کمار چاو ¿لہ نے کہا کہ ایکسائز پولیس کو کسی بھی جگہ ہر ایک گاڑی کی جانچ پڑتال کرنے کی اجازت نہیں ہے ، سڑک کے وسط میں گاڑیاں روک کر ٹیکس ادا کرنے والی گاڑیوں کو روکنے کے مجاز نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس نادہندہ گان گاڑیوں سے ٹیکس وصولی کے لئے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات سندھ وقتاً فوقتاً روڈ چیکنگ مہم شیڈول کے مطابق اعلان کرتا ہے۔انہوں نے نگران افسران کو ہدایت کی کہ وہ اپنے ماتحت عملے کو گاڑیوں کی غیر مجاز چیکنگ سے روک تھام کریں اور محکمانہ ہدایتوں کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف ضروری کارروائی کریں۔ مکیش کمار چاو ¿لہ نے کہا کہ گاڑیوں کو بلاجواز روکنے اور گاڑیوں سے سامان اتارنے کی کسی بھی قسم کی غیر قانونی سرگرمی کو ہر قیمت پر روکنا ہوگا اور مستقبل میں ایسی کوئی شکایت موصول نہیں ہونی چاہئے بصورت دیگر وہ متعلقہ افسران کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔