60ارب ڈالر کے سی پیک کا چارج عاصم سلیم باجوہ جیسے کرپٹ انسان کے پاس ہونا چاہیے؟-مریم نواز کا گوجرانوالہ جلسے سے خطاب

مریم نواز نے سوال کیا ہے کہ کیا 60ارب ڈالر کے سی پیک کا چارج عاصم سلیم باجوہ جیسے کرپٹ انسان کے پاس ہونا چاہیے؟ تفصیلات کے مطابق مریم نواز کی جانب سے گوجرانوالہ جلسے میں چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ کیا آپ کو عاصم سلیم باجوہ نظر نہیں آتا؟ کیا 60ارب ڈالر کے سی پیک کا چارج عاصم سلیم باجوہ جیسے کرپٹ انسان کے پاس ہونا چاہیے؟ مریم نواز نے کہا کہ وفاقی کابینہ کے ارکان ایک ہفتے سے گوجرانوالہ میں ڈیرے ڈال کر بیٹھے ہوئے تھے، ان کو اتنا خوف تھا، کل عمران خان پناہ گاہ میں جاگھسا، آپ جہاں مرضی جاؤ کہیں پناہ نہیں ملے گی، میں آج آپ کے پاس نوازشریف، مریم نواز، مسلم لیگ ن یا اپوزیشن کا مقدمہ نہیں لے کر آئی ہوں، میں آج آپ کے پاس آپ کا مقدمہ لے کر آئی ہوں، اس ماں کو دیکھتی ہوں جس کے بچوں کی روٹی پوری نہیں ہوتی، تاجر، ریڑھی بان ، مزدروروں، غریبوں کا مقدمہ لے کر آئی ہوں، عدلیہ کا مقدمہ جب وہ آئین اور قانون پر چلنے کی بات کرتے ہیں تو ان کا حال جسٹس قاضی فائز عیسیٰ والا ہوتا ہے، میڈیا کی آواز بندی کا مقدمہ لے کر آئی ہوں، منتخب نمائندوں کا مقدمہ لے کر آئی ہوں، ان کو اقامے کی بنیاد پر نکال دیا جاتا ہے۔


حکومتی مشیر یہ کہتے ہیں نوازشریف کا بیانیہ سمجھ میں نہیں آتا، کیا آئین شکنی اور ووٹ چوری کا مقدمہ سمجھ آتا ہے؟حساب کتاب عوام نے کرنا ہے، کسی کو حق نہیں منتخب وزیراعظم کو اٹھا کر باہر نکال دے۔ عمران خان کہتا کہ سابق جنرل ظہیر السلام نے نوازشریف سے اس لیے استعفیٰ مانگا کہ اس کو پتا تھا کہ نوازشریف نے کرپشن کی ہے۔ کیا آپ کو عاصم سلیم باجوہ نظر نہیں آتا؟ جب ووٹ کو عزت نہیں ملتی تو عوام کا وہ حال ہوتا ہے جو آج حال ہے، پھر آٹا بھی چوری ہوتا ہے، یہ ہمیں سیسلین مافیا کہتے تھے اب پتا چلا مافیا کیا ہوتا ہے؟ پہلے چیزیں غائب کرواتے ہیں پھر ریٹ بڑھا کر مارکیٹ میں لے آتے ہیں۔
عمران خان کی کرپشن کی داستانیں باہر آئیں تو لوگ کانوں کو ہاتھ لگائیں گے، عمران خان کہتے ہیں سب ایک صفحے پر ہیں، صفحہ پلٹتے دیر نہیں لگتی۔ وعدہ کرو آئندہ کسی کو ووٹ پر ڈاکہ نہیں ڈالنے دوگے۔ وعدہ کرو گھر میں بچوں کی تکلیفوں کا حساب لو گے۔ وعدہ کرو، جب نوازشریف کال دے گا، پی ڈی ایم کال دے گی تو باہر نکلو گے۔میاں نوازشریف کی تقریر سنتی ہوں تو مجھے ڈر لگتا ہے کیونکہ میں بیٹی ہوں، لیکن عزت ذلت اللہ کے ہاتھ میں ہے
—–Urdupoint—-report