موجودہ حکمرانوں کی نااہلی اور جہالت کا عذاب عوام مہنگائی کی صورت میں سہہ رہے ہیں

کراچی( نمائندہ خصوصی )
موجودہ حکمرانوں کی نااہلی اور جہالت کا عذاب عوام مہنگائی کی صورت میں سہہ رہے ہیں جبکہ کرپشن کے خاتمے کے ساتھ حکومت میں آنے والے غلط پالیسیوں کے باعث عوام کی جیبوں پر ڈاکے ڈال کر دونوں ہاتھوں سے ملک کو لوٹا جا رہا ہے ان خیالات کا اظہار معروف ماہر معیشت محمد ہارون حسن فتہ نے ایک خصوصی انٹرویو میں کیا ۔ محمد ہارون حسن فتہ نے نے کہا حکمرانوں کی نااہلی کے باعث پاکستان مہنگائی میں ایشیا میں پہلے نمبر پر آ گیا ہے جبکہ نا اہل حکمران عوام کی جیبوں پر مسلسل ڈاکے ڈال رہے ہیں محمد ہارون حسن فتہ نے نے دعوی کیا عوام کو بےوقوف بنانے اور ماضی کے حکمرانوں کو چور ثابت کرنے کی کوشش میں وزیراعظم اور ان کی ٹیم نے پاکستانی عوام پرمہنگائی کا عذاب مسلط کر دیا ہے ۔پاکستان کی اپنی پیداوار چینی کی قیمت 90 سے110 روپے تک 2021 دسمبر یا مارچ 2022 تک رہے گی جوکہ غلط حکومتی پالیسیوں کا نتیجہ ہے ۔ مقتدر ہ قوتیں فوری نوٹس لیں اور میر ی بنائی ہو ئی پالیسیوں پر فورآ عمل درآمد کو یقینی بنائیں ۔ان شاءاللہ یہ ہی چینی 40 سے50 روپے میں عوام کو فروخت کرنے پر مجبور ہو جائیں گے ۔جبکہ شوگر مافیاز نے چینی چھپا لیں ہے جبکہ عوام کی جیبوں پر ڈاکے ڈالنے میں حکمران بھی برابر کے شریک ہیں ۔ محمد ہارون حسن فتہ نے نے موجودہ حکمرانوں کو نا اہل قرار دیتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو پاکستان کی ناکام ترین حکومت قرار دیا ہے انھوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں ایف بی آر نے اسلام آباد میں مجھ سے ایک بریفنگ لی ۔ جس کو قابل عمل اور عوامی مفاد میں بہترین قرار دیا تھا مگرحکمرانوں کی وجہ سے ان پر عمل درآمد سے معذرت کی انھوں نے ملک کے پالیسی سازوں اور مقتدر ہ قوتیں سے اپیل کی ہے کہ کی خدارا ملک پر رحم کریں اور صحیح پالیسیوں پر عملدرآمد کرائیں اور عوام کو ان نااہل حکمرانوں اور ان پر مسلط مہنگائی کے عذاب سے نجات دلائیں