گورنر سندھ نے معاشی سرگرمیاں ماند پڑنے کی ذمہ داری کے الیکٹرک اور سوئی سدرن گیس کمپنی پر ڈال دی

 کے الیکٹرک اور سوئی سدرن گیس کمپنی اپنے معاملات جلد حل کریں ۔ گورنرسندھ

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے سوئی سدرن گیس کمپنی اور کے الیکٹرک کے وفد نے گورنرہاﺅس میں ملاقات کی۔ ملاقات میں بجلی و گیس کی ترسیل ،درپیش مشکلات اور اہمیت کے حامل دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس موقع پر گورنرسندھ نے کہا کہ عوام الناس کو بنیادی سہولیات کی فراہمی موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے ، ملک کے اقتصاد ی حب کے حامل شہر میں بجلی و گیس کی تسلسل سے فراہمی کے ذریعہ معاشی سرگرمیوں کو مزید فروغ دیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کے الیکٹرک حکام شہر میں بجلی کی بلا تعطل فراہمی ہر صورت یقینی بنائے اس ضمن میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کسی صورت برداشت نہیں کرسکتے ۔گورنرسندھ نے کے الیکٹر ک اور سوئی سدرن گیس کمپنی کے حکام کو ہدایت دی کہ وہ اپنے مسائل کو جلد از جلد حل کریں اداروں کے مسائل کے باعث عام آدمی متاثر ہو تا ہے جبکہ معاشی سرگرمیاں بھی اس سے ماند پڑ جاتی ہیں اس لئے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ اداروں کے مسائل کے اثر سے عام آدمی متاثر نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک میں ابھی چند روز باقی ہیںان ایام میں شدید گرمی اور مذہبی فریضہ کی ادائیگی کے دوران عام آدمی کا زیادہ تر انحصار بجلی اور گیس پر ہوتا ہے بجلی اور گیس کی بندش یا کمی سے گھریلو معاملات پر براہ راست اثر ہوتا ہے لہذا اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ رمضان المبارک کے ایام میں بجلی اور گیس کی بلا تعطل فراہمی ہوسکے ۔



اپنا تبصرہ بھیجیں