خصوصی افراد کے لیے خصوصی کاوشیں کرنے پر چیف سیکرٹری سندھ ممتاز علی شاہ قا بل تحسین ہیں ۔

سندھ کے چیف سیکریٹری ممتاز علی شاہ اس لحاظ سے قابل تعریف ہیں کہ وہ صوبے میں خصوصی افراد کے حوالے سے خصوصی کاوشیں اور اقدامات کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں گزشتہ دنوں انہوں نے صوبے بھر کے سرکاری افسران کو خصوصی افراد کے حوالے سے سرکاری ملازمتوں میں مختص کوٹ پر عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایات بھی جاری کی اور خصوصی افراد کی بھرتیوں کے حوالے سے

پالیسی اور اب تک ہونے والے اقدامات کا جائزہ لیا اور اس سلسلے میں اشتہارات جاری کرنے کی ہدایت بھی کی ۔

جو لوگ سندھ کے چیف سیکریٹری ممتاز علی شاہ کو قریب سے جانتے ہیں وہ گواہی دیتے ہیں کہ ممتاز علی شاہ نے ہر دور میں خصوصی افراد کے لیے خصوصی اقدامات اٹھائے چیف سیکرٹری تو وہ اب ہیں

لیکن جب چیف سیکریٹری نہیں تھے تب بھی وہ مختلف سرکاری عہدوں پر رہتے ہوئے انہوں نے


خصوصی افراد کی بہتری اور بحالی کے لیے جو ممکن ہوا وہ اقدامات کیے اس لیے ہر ضلع اور

ہر اس محکمہ میں جہاں انہوں نے فرائض انجام دیے آج بھی ان کے اقدامات اور اچھے کاموں کی وجہ سے ان کو یاد کیا جاتا ہے اور ہر جگہ ان کا نام عزت اور احترام سے لیا جاتا ہے ۔

ممتاز علی شاہ ذاتی طور پر ایک سادہ اور شریف انسان ہیں وہ


بطور چیف سیکرٹری سندھ صوبے کی ترقی اور بہتری کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں قانون کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے انہوں نے لوگوں کی بےپناہ مدد کی ہے

اور ان کی پوری کوشش ہوتی ہے کہ گڈ گورننس کے حوالے سے ہر وہ اقدام اٹھایا جائے جو ان کے بس میں ہے ۔لوگ گواہی دیتے ہیں کہ ان کے دور میں صوبے میں صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے اور مزید بہتری کے

امکانات ہیں انہوں نے جو درد مندانہ فیصلے کئے ہیں ان کے مثبت اور دوررس نتائج آنے والے دنوں میں لوگوں کے سامنے آتے رہیں گے ۔سندھ میں بے پناہ مسائل ہیں اور ان چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے وقت درکار ہوتا ہے ایک رات میں کوئی جادو کی چھڑی

گھما کر سب کچھ ٹھیک نہیں کر سکتا لیکن اگر نیت ٹھیک ہو ارادہ مضبوط ہو تو آپ کے اقدامات کی سمت درست رہتی ہے اور اس کے مثبت نتائج آتے ہیں ۔ممتاز علی شاہ بھی صوبے کی پیچیدہ اور مشکل صورتحال کو سنبھالنے اور گھمبیر

مسائل کے حل کے لیے بھرپور کام کر رہے ہیں ۔بے شمار لوگوں کی دعائیں ان کے ساتھ ہیں ۔