نیشنل فوڈز کی ڈائریکٹر ایچ آر سائرہ اے خان کی جیوے پاکستان سے خصوصی گفتگو

ملاقات … وحید جنگ

سائرہ اے خان پاکستان کے سرکردہ کمپنی نیشنل فوڈز میں ڈائریکٹر ایچ آر کی اہم ذمہ داریاں نبھا رہی ہیں ورکنگ وومن کی حیثیت سے ان کے اپنے تجربات اور خیالات ہیں جن سے آگاہی حاصل کرنے کے لیے گزشتہ دنوں جیوے پاکستان ڈاٹ کام نے ان سے خصوصی گفتگو کی یہ ملاقات گورنر ہاؤس میں وومن ڈے کی مناسبت سے منائی گئی خصوصی تقریب کے موقع پر ہوئی ۔سائرہ خان نے اس تقریب کے انعقاد کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے بتایا کے اس تقریب میں بہت اچھے مہمان آئے اور بہت اچھے موضوعات پر گفتگو ہوئی زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے شرکت کی نئے آئیڈیاز سامنے آئے صرف نوکری پیشہ خواتین کے لیے ہی نہیں بلکہ تمام خواتین کے لیے اچھی باتیں ہوئیں مجموعی طور پر خواتین کو یہاں بہت سے آئیڈیاز ملے اور بہت کچھ سیکھنے کو ملا ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ ورکنگ وومن سمیت خواتین کے مسائل توجہ طلب ہیں جو خواتین کسی بھی وجہ سے نوکری کرنے یا ملازمت کرنے کے لئے گھر سے نکلتی ہیں سب سے بڑا مسئلہ ان پر گھر والوں کا ٹرسٹ ہونا چاہیے یہ ٹرسٹ ان میں اعتماد پیدا کرتا ہے ان کا حوصلہ بڑھاتا ہے اور ان کی پرفارمنس کو نکھارتا ہے جب گھر سے کسی لڑکی یآ عورت کو اعتماد دیا جاتا ہے اس کے کام کو سراہا جاتا ہے اس کی ہمت افزائی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے تو وہ زیادہ بہتر انداز میں اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتی ہے اور اس کی کارکردگی میں بہتری آتی ہے ۔سائرہ ایک خان نے جیوے پاکستان ڈاٹ کام کی خدمات کو سراہا اور اس کے لئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا اور اس بات پر زور دیا کہ میڈیا کو ورکنگ وومن کے مسائل کو نہ صرف اجاگر کرنا چاہیے بلکہ ان کی حوصلہ افزائی اور ہمت افزائی بھی کرتے رہنا چاہیے ۔انہوں نے بتایا کہ نیشنل فوڈز میں خواتین کو بھرپور مواقع فراہم کیے جاتے ہیں اور ان کی اچھی کارکردگی کو قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے اور ان کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں