کراچی کو پر سکون شہر بنانے کے لئے فنون لطیفہ کی سرگرمیاں ضرور ی ہیں کمشنر کراچی سہیل راجپوت


حکومت آرٹس کونسل کی مدد جاری رکھے گی گورننگ باڈی کے اجلاس سے بحیثیت چیئرمین خطاب
۔ ادب و شاعری کو درپیش چیلنجز کا مقابلہ کرنے کی امید پیدا ہوئی ہے سہیل راجپوت
کراچی ( ) کمشنر کراچی سہیل راجپوت نے کہا ہے کہ شہر کی سماجی ترقی اورامن کو مستحکم کرنے کے لئے ثقافتی سرگرمیاں ضروری ہیں۔آرٹس کونسل کو چاہئے کہ وہ ادب و فن کے فروغ کے پروگراموں کو جاری رکھے اس کا دائرہ بڑھائے ۔حکومت آرٹس کونسل کی ہر ممکنہ مدد کرے گی۔ یہ بات انھوں نے بحیثیت چیئرمین گورننگ باڈی کراچی آرٹس کونسل کی گورننگ باڈی کے اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے کہی ۔ اجلاس میں صدر آرٹس کونسل احمد شاہ نے کمشنر کراچی کو آرٹس کونسل کی سرگرمیوں اور مستقبل کے منصوبوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی کمشنر نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کا وثرن ہے کہ مثبت معاثرہ کے لئے فنون لطیفہ کو فروغ دینے کی ضرورت ہے ۔ حکومت نے آرٹس کونسل کی پہلے بھی مدد کی ہے اور مستقبل میں بھی یہ مدد جاری رکھے گی ۔ انھوں نے کہا کہ ہمارا ادب بہت زرخیز ہے ہمیں اردو اور علاقائی زبانوں کے ادب کو فروغ دینے کے لئے سنجیدہ کوششیں کرنی چاہیے تاکہ آنے والی نسلیں اسے محفوظ رکھ سکیں

انھوں نے کہا ہم نے ہر صنف فن میں عظیم لوگ پیدا کئے لیکن آج کی مادی زندگی نے ہمیں ادب و شاعری سے دور کر دیا ہے اور ہمیں ڈر ہے کہ اگر اس کے لیے ہم نے آرٹس کونسل جیسے مزید ادارے نہ بناے تو ہم اپنے اس ادبی و ثقافتی ورثہ کو کھو دیں گے ۔ انھوں نے اردو شاعری اور ادب سے اپنی گہری دلچسپی ظاہر کی بتایا کہ وہ خود بھی شعر کہتے رہے ہیں انھوں نے کہا کہ کراچی آرٹس کونسل کی سرگرمیوں سے کراچی میں وہ ماحو ل پیدا ہواہے جس میں فن و ادب جلا پا سکتا ہے اس ماحول کی وجہ سے معاثرہ میں ادب و شاعری کو درپیش موجودہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کی امید پیدا ہوئی ہے۔
احمد شاہ نے کہا کہ آرٹس آج اپنے پاﺅ ں پر کھڑا ہوا اس کی بنیادی وجہ حکومت سندھ کی مدد ہے حکومت سندھ کے علاوہ یا وفاقی طح پر ہماری کسی نے مدد نہیں کی ۔اجلاس سے، نائب صدر اختر وقار عظیم، سیکریٹری پروفیسر اعجاز فاروقی ، نور الہدی شاہ، حسینہ معین، اداکار طلعت حسین ، اقبال لطیف ،قدسیہ اکبر،اسجد بخاری، کاشف گرامی ، شکیل خان اور ادیگر نے بھی خطاب کیا