گورنرسندھ عمران اسماعیل سے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کی ملاقات

امید ہے کہ ورلڈ کپ میں ہر ایک کھلاڑی بہتر پرفارمز کا شاندار مظاہرکر ے گا ، پوری قوم دعا گو ہے۔ عمران اسماعیل

چاہتے ہیں کہ ایک بار پھر ورلڈ کپ ہمارے ملک میں آئے۔ کپتان سرفرازاحمد کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب 

کراچی ۔ گورنرسندھ عمران اسماعیل سے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے گورنرہاﺅس میں ملاقات کی۔ اس موقع پر کپتان سرفراز احمد نے کہا کہ گورنر اور حکومت پاکستان کا یہاں مدعو کرنے پر شکر گزار ہوں۔ گورنرسندھ نے کہا کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم آئندہ ماہ ورلڈ کپ کھیلنے جارہی ہے امید ہے کہ ہر ایک کھلاڑی بہتر کارکردگی کا مظاہرکریں گے جس کی پوری قوم منتظر رہے گی ورلڈ کپ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی بہتر کارکردگی سے کرکٹ کی دنیا میں پاکستان کا نام ماضی کی طرح ایک بار پھر روشن ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ آپ کی قائدانہ صلاحیت سے انکار ممکن نہیں،

[supsystic-gallery id=41]

ورلڈ کپ آپ کی بہترین قائدانہ صلاحیتوں کا کڑا امتحان ثابت ہوگا ،پوری قوم دعا گو ہے کہ انشااللہ اس مرتبہ پاکستان دوبارہ کرکٹ کی دنیا پر حکمرانی حاصل کرے گا ۔بعد ازاں گورنر ہاو ¿س میں گورنر سندھ نے سرفراز احمد کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سرفراز احمد کو حکومت کی جانب سے نیک خواہشات کا پیغام دینے کیلئے آج مدعو کیا ہے امید ہے سرفراز کی کپتانی میں ٹیم اچھا پرفارم کرے گی،چاہتے ہیں کہ ایک بار پھر ورلڈ کپ ہمارے ملک میں آئے کیونکہ ہمارے ٹیم کے کھلاڑی جیتنے کی بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ 162 ارب روپے کے کراچی پیکج میں ترقیاتی منصوبے شامل ہیں ۔ آئندہ چند ماہ میں بیشتر منصوبوں کا افتتاح کرلیا جائے گا ۔ گرین لائن بس کے حوالے سے کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گرین لائن بس کے لئے انفرااسٹرکچر مکمل کیا جا چکا ہے اس ضمن میں کے پی کی حکومت کی جانب سے درآمد کی گئی بسوں میں سے 25 بسیں گرین لائن کے لئے لینے کے سلسلے میں وفاق اور حکومت خیبر پختونخواہ سے بات کروں گا اگر کوئی قانونی ہچھ نہ ہوئی تو25 بسیں لے کر گرین لائن منصوبہ کا فوری آغاز کیا جا سکتا ہے جب سندھ کے لئے گرین لائن بسیں آئے گی تو ہم ان کو 25 بسیں دے دیں گے ۔ نیب کے بارے میں کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنرسندھ نے کہا کہ نیب ایک خود مختار ادارہ ہے حکومت کا نیب کی کارروائی پر کوئی زور نہیں ہے وہ اپنے طریقہ کار سے کام کررہے ہیں ۔سوال کا جواب دیتے ہوئے عمران اسماعیل نے ایک بار پھر حکومت سندھ کو دعوت دی کہ وہ آئے اور ترقیاتی منصوبوں میں روکاوٹ ڈالنے کے بجائے مل کر کام کریں ۔ ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے جب اقتدار سنبھالا تو ملکی خزانے کی بہت خراب حالت تھی مگر نو ماہ کے مختصر عرصہ میں معاشی پالیسیوں کے بدولت معیشت کے حالات کافی بہتر ہوئے ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں