ڈاکٹر ماہا شاہ خودکشی کیس، نامزد ملزم جنید خان کے وکلاء کے تفتیشی افسر پر تحفظات

ڈاکٹر ماہا شاہ خودکشی کیس، نامزد ملزم جنید خان کے وکلاء کے تفتیشی افسر پر تحفظات

واقعہ کے فوری بعد تفتیش کے حوالے سے جنید خان نے پولیس سے ہر ممکن تعاون کیا، خواجہ نوید ایڈووکیٹ

وقوعہ کے اگلے روز جنید خان گذری تھانے میں ایس ایچ او کے پاس خود پیش ہوا۔ خواجہ نوید ایڈووکیٹ

اسی روز جنید خان کو اے ایس پی کلفٹن زاہدہ پروین کے دفتر پیش کیا گیا، 2 گھنٹے تک معلومات فراہم کیں، خواجہ نوید ایڈووکیٹ

جنید خان نے ڈاکٹر ماہا سے آخری وقت تک فون پر ہونے والی پیغام رسانی اور تصاویر اے ایس پی کلفٹن شیئر کیں، خواجہ نوید

21 اگست کو جنید خان ڈی آئی جی ساؤتھ آفس میں پیش ہوا، ماہا علی کی خودکشی کی ممکنہ وجوہات سے آگاہ کیا گیا۔

مقدمہ کے اندراج سے پہلے جنید خان طلبی پر ایس ایس پی انویسٹی گیشن بشیر بروہی کے روبرو پیش ہوا۔ ایڈووکیٹ

ایس ایس پی انویسٹی گیشن ساوتھ آفس میں 3 متعلقہ پولیس افسران نے جنید سے ڈیڑھ گھنٹہ تفتیش کی۔ ایڈووکیٹ

تفتیشی ٹیم کو شواہد دکھائے گئے، خودکشی کی تفتیش میں پولیس سے ہرممکن تعاون کیا۔ خواجہ نوید ایڈوکیٹ

ماہا علی کی خودکشی کی وجہ کے مقدمہ کے اندراج کے بعد بھی جنید خان کا پولیس سے تعاون جاری ہے، خواجہ نوید ایڈووکیٹ

ضمانت قبل ازگرفتاری کرانا نامزد ملزم کا حق ہے، اگلے روز ہی مقدمے کی تفتیش جوائن کی، خواجہ نوید ایڈووکیٹ

جنید خان نے تفتیشی ٹیم کو 6 گھنٹے تک بیان ریکارڈ کرایا، بے گناہی کے تمام شواہد پیش کئے۔ خواجہ نوید ایڈووکیٹ

تفتیشی ٹیم نے فریئر تھانے لے جاکر نامزد ملزم جنید خان کا سی آر او ریکارڈ بھی کرایا۔ خواجہ نوید ایڈووکیٹ

اگلے روز تفتیشی افسر نے عدالت میں جھوٹا بیان دیا کہ جنید خان تفتیش جوائن نہیں کررہا۔ بیرسٹر رحمان گھوس

عدالت کو بتایا کہ 5 صفحات کا بیان ریکارڈ کرادیا، تعاون نہیں کیا تو جیند خان کا سی آر او کیسے ریکارڈ ہوا۔ بیرسٹر رحمان گھوس

تفتیشی افسر کے عدالت میں جھوٹ بولنے پر ڈی آئی جی ساوتھ کو خط لکھ کر آگاہ کردیا۔ بیرسٹر رحمان گھوس

اگلے روز جنید پھر ایس ایس پی انویسٹی گیشن بشیر بروہی آفس پیش ہوا، ساڑھے 3 گھنٹے تک تفتیش کی گئی۔ خواجہ نوید ایڈووکیٹ

ماہا علی کے والد پیر آصف شاہ کے من گھڑت الزامات پر جنید خان نے پریس کانفرنس کرکے حقائق میڈیا پر بیان کئے۔ بیرسٹر رحمان گھوس

ڈی آئی جی ساوتھ کو آگاہی کے بعد تفتیشی افسر شرافت علی کے پاس آئی فون جمع کرایا جاچکا ہے۔ خواجہ نوید ایڈووکیٹ

تفتیش افسر کے حوالے سے میڈیا پر جھوٹ بولا جا رہا ہے کہ جنید خان موبائل فون جمع نہیں کرا رہا، بیرسٹر رحمان گھوس

ضمانت کی کنفرمیشن کی دو سماعتوں پر مدعی کا وکیل جان بوجھ کر غیر حاضر ہو رہا ہے۔ بیرسٹر رحمان گھوس

میرا کلائنٹ جنید خان بے گناہ ہے، کسی کے ایماء پر اس کی کردار کشی کی جارہی ہے۔ بیرسٹر رحمان گھوس