وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی کورنگی کے مختلف سرکاری اور نجی اسکولوں کے اچانک دورے پر پہنچ گئے.

صوبائی وزیر نے کورنگی لکھنو سوسائٹی میں قائم ناصرہ اسکول کورنگی کیمپس اور بیکن ہاؤس کورنگی کیمپس کا دورہ کیا.

صوبائی وزیر نے اسکول میں داخلہ کے وقت تھرمل گن، سینیٹائزر اور دیگر ایس او پیز کے حوالے سے تفصیلات طلب کی.

نجی اسکولز کی جانب سے اقدامات بہتر ہیں تاہم انہیں بھی تمام ایس او پیز کو مستقل بنائے رکھنا ہوگا. سعید غنی

کوشش کی جائے کہ بغیر ماسک کوئی طالبعلم، استاد یا غیر تدریسی عملہ نہ ہو. سعید غنی

صوبائی وزیر نے کلاسز میں طلبہ و طالبات سے ایس او پیز کے حوالے سے تفصیلات طلب کی.

وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی کورنگی سیکٹر 42، ڈھائی نمبر میں گورنمنٹ ڈگری بوائز کالج پہنچ گئے.

صوبائی وزیر نے کالج میں صفائی ستھرائی کی خراب صورتحال پر وہاں عملے کی سرزرش کی.

صوبائی وزیر کا سیکرٹری کالجز باقر نقوی کو فوری طور پر مذکورہ کالج کا دورہ کرنے کی ہدایات.

بعد ازاں صوبائی وزیر سعید غنی کورنگی ڈھائی نمبر پر قائم گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج پہنچ گئے.

صوبائی وزیر نے کالج میں جاری تدریسی عمل کا جائزہ لیا اور طالبات سے ایس او پیز کے حوالے سے ان سے معلومات لی.

وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی کورنگی نمبر 3 اور 4 کے مختلف نجی اسکولز پہنچ گئے.

صوبائی وزیر نے کورنگی میں المصطفی ویلفیئر اور اسماعیل ٹرسٹ کے زیر اہتمام چلنے والی پرائمری و سیکنڈری اسکول اسماعیل اکیڈمی کا اچانک دورہ کیا.

صوبائی وزیر نے ان نجی اسکولوں میں تعلیمی سرگرمیوں کی بحالی کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا.

صوبائی وزیر نے تمام نجی اسکولز کی انتظامیہ پر زور دیا کہ کلاس رومز میں بچوں کے درمیان سماجی فاصلہ ہر ممکن رکھا جائے.

اگر کسی کلاس میں طالبعلموں کی تعداد زیادہ ہو تو ان کلاسوں کو دو حصوں میں تقسیم کیا جائے. سعید غنی