انڈیا میں ہر گزرتے دن کے ساتھ کورونا کیسز میں نمایاں اضافہ

انڈیا میں کورونا متاثرین کی تعداد 40 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور اس طرح یہ کورونا کیسز کے لحاظ سے دنیا کا تیسرا ملک بن گیا ہے اور ہر گزرتے دن کے ساتھ متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے۔
گذشتہ روز 86 ہزار سے زائد نئے کیسز کے باعث اب کورونا متاثرین کی تعداد انڈیا میں 40 لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جو کہ برازیل اور امریکہ کے بعد تیسرے نمبر پر ہے۔ امریکہ میں متاثرین کی تعداد 6.3 ملین جبکہ برازیل کی تعداد 4.1 ملین ہے۔
انڈین حکومت نے معیشیت کی بحالی کے لیے پابندیوں میں نرمی کی ہے تاہم کورونا مریضوں کی تعداد روزانہ کی بنیاد پر 80 ہزار تک ہے اور روزانہ ایک ہزار ہلاکتیں بھی ہو رہی ہیں جو کہ دنیا بھر میں سب سے زیادہ ہیں

صرف 13 دن میں یہ تعداد 30 سے 40 لاکھ تک جا پہنچی ہے جو امریکہ اور برازیل سے زیادہ ہے۔
کورانا وائرس انڈیا میں اب دیہی علاقوں میں بھی پھیل رہا ہے جہاں صحت کی ناقص سہولیات ہیں لیکن دہلی اور ممبئی جہاں صحت کی سہولیات بہتر ہیں وہاں بھی کورونا کیسز کی تعداد دن بہ دن بڑھ رہی ہے۔
ریاست مہاراشٹر، جس میں ممبئی بھی شامل ہے، مارچ میں ملک بھر میں لاک ڈاؤن نافذ کرنے کے بعد سے ہی انڈیا میں بحران کا مرکز رہا ہے۔ یہاں بھی کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے۔
شمیکا راوی جو کہ انڈیا میں معاشیات کی ایک پروفیسر اور سابقہ حکومت کی مشیرکے طور پر کام کرتی رہی ہیں اور انہوں نے انڈیا میں کورونا کیسز کی قریب سے پیروی کی ہے، نے کہا کہ انڈیا میں کورونا عروج پر ہے اور مہاراشٹرا کو کورونا وائرس کے خلاف مہم کا مرکز بننا ہوگا۔

’مہاراشٹرا پورے ملک میں کہیں بھی انفیکشن کے پھیلاؤ پر اثر انداز ہوتا رہے گا۔‘ (فوٹو اے ایف پی)

انہوں نے ٹویٹر پر کہا کہ ’مہاراشٹرا میں کورونا پر قابو پائے بغیر انڈیا میں کورونا کو کنٹرول نہیں کیا جاسکتا ہے۔ اس کی معاشی اہمیت کے پیش نظر مہاراشٹرا پورے ملک میں کہیں بھی انفیکشن کے پھیلاؤ پر اثر انداز ہوتا رہے گا
urdunews-report