سابق بھارتی کرکٹر سریش رائنا کے گھر کہرام مچ گیا

چندی گڑھ – بھارت کے حال ہی میں ریٹائرمنٹ کا اعلان کرنے والے کرکٹر سریش رائنا کے ماموں کو ڈکیتی میں مزاحمت پر قتل کردیا گیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق 34 سالہ سریش رائنا کے ماموں اشوک کمار کو پٹھانکوٹ میں قتل کیا گیا، واقعہ 19 اور 20 اگست کی درمیانی شب ڈکیتی میں مزاحمت پر پیش آیا ، وہ سرکاری ملازم تھے۔
مقتول کے بڑے بھائی شیام لال نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ سریش رائنا جلد ہی گاؤں کا دورہ کریں گے۔ دوسری جانب پولیس نے بتایا ہے کہ کالے کچھے والے گینگ کے ارکان نے ترپال گاؤں میں اشوک کمار کے گھر پر دھاوا بولا۔ وہ اس وقت چھت پر سورہے تھے، ان کے سر میں چوٹیں آئیں اور وہ اسی رات جان کی بازی ہارگئے۔ پولیس نے یہ تصدیق نہیں کی ہے کہ کیا واقعی مقتول کی سریش رائنا سے رشتہ داری تھی۔

یاد رہے کہ سریش رائنا نے حال میں نجی مصروفیات کے باعث رواں برس انڈین پریمیئر لیگ سے دستبرداری کا اعلان کیا ہے ،وہ انڈین پرمیئر لیگ کی تاریخ کے دوسرے کامیاب ترین بلے باز ہیں جنہوں نے اب تک 193 میچز میں 33.34 کی اوسط سے 5368 رنز سکور کررکھے ہیں جس میں ایک سنچری اور 38 نصف سنچریاں شامل ہیں ، انہوں نے یہ رنز 137.11 کے سٹرائیک ریٹ سے سکور کیے