پاکستان کےجدہ قونصل جنرل آف پاکستان کی رہائش گاہ پر ’’ مینگو میلہ ‘‘ منعقد کیاگیا

جدہ ( ناظم علی عطاری ) پاکستان کےجدہ قونصل جنرل آف پاکستان کی رہائش گاہ پر ’’ مینگو میلہ ‘‘ منعقد کیاگیا جس میں
پاکستانی آموں کی مختلف اقسام ، جیسے سندڑی ، چونسہ ، انور رٹول ، اور لنگڑا کو نمائش کے لئے پیش کیا گیا م اور اس کا ذائقہ سعودی عرب کے معززین اور سفارت کاروں نے بے حد پسند کیا۔


اس سے قبل ، مہمانوں کا استقبال کرتے ہوئے ، قونصل جنرل خالد ماجد نے حاضرین کو بتایا کہ پاکستان سعودی عرب میں آموں کا دوسرا سب سے بڑا برآمد کنندہ ہے اور عرب خطے میں تمام قومیتوں کو پاکستانی آموں کی مٹھاس اور خوشبو بے حد پسند ہے۔آم کا سیزن مئی سے شروع ہو کر اکتوبر کے آخر تک ہوتا ہے لیکن COVID-19 اور بین الاقوامی پروازوں کی معطلی کی وجہ سے ، پاکستانی آم کو جون 2020 سے عرب خطے میں شروع کیا گیا تھا۔ آم کے سلائسز ، ملک شیک ، آئس کریم ، مینگو لسی اور آم کے ذائقہ کے ساتھ بنے کیک کو بھی نمائش میں رکھا گیا۔اس تقریب میں سعودی معززین
انجینئر مازن بترجی، محمد بوقس،عبدالله عادل طيب،سراج شربيني آف بن داؤد، ڈاکٹر عبدالرحيم فياض اورنوشين احمد نے قونصل خانے کی ’’ آم ڈپلومیسی ‘‘ اور پاکستان کی نرم شبیہہ کو فروغ دینے کی کوششوں کو دل کی گہرائیوں سے سراہا اور امید کی کہ پاکستان اور سعودی عرب کے مابین تجارتی روابط کو فروغ دینے کے لئے نئے روزن کھلیں گے۔کرونا سے متعلق احتیاطی تدابیر سے وابستہ مقامی پابندیوں کی تعمیل کرتے ہوئے محدود پیمانے پر شرکاء کو مدعو کیا گیا۔ اس پروگرام کی سعودی اور پاکستانی میڈیا نے بڑے پیمانے پر کوریج کی۔