کرکٹ ٹیم کی ناقص کارکردگی

پاکستان اور انگلینڈ کے مابین ٹیسٹ سیریز
کرکٹ ٹیم کی ناقص کارکردگی


جمعرات 27 اگست 2020ء
پاکستانی ٹیم تین میچوں کی ٹی ٹوئنٹی سیریز کا پہلے میچ 28 اگست کو کھیلے گی۔
طارق اقبال سے
پاکستان اور انگلینڈ کے مابین تیسرا ٹیسٹ میچ ڈرا ہو گیاہے جس کے بعد انگلینڈ نے پاکستان کے خلاف ٹیسٹ سیریز ایک صفر سے جیت لی ہے۔ کورونا وبا پھیلنے کے ساتھ ہی ہر طرح کی سرگرمیاں معطل ہو گئی تھیں۔ یہاں تک کہ کھیلوں کے میدان بھی ویران ہو گئے ۔ کورونا کیسز میں کمی کے بعد آئی سی سی نے ایس او پیز کے تحت کھیلوں کی سرگرمیاں بحال کرنے کا فیصلہ کیا۔ جس کے بعد پاکستان کرکٹ ٹیم نے انگلینڈ کا دورہ کیا، پہلے ٹیسٹ میچ میں ٹیم کی کارکردگی بہت اچھی تھی، اگر تھوڑی سی محنت کی جاتی تو پہلا ٹیسٹ میچ جیتا جا سکتا تھا لیکن بدقسمتی سے بائولرز اور بلے بازوں کی لاپرواہی سے پہلا میچ ہاتھ سے چلا گیا۔ دوسرا میچ ڈرا ہوا لیکن اس میں بھی پاکستانی کھلاڑیوں کی کارکردگی ناقص رہی۔ بسا اوقات تو یوں محسوس ہوتا تھا جیسے پاکستانی کھلاڑی میچ کھیلنا ہی بھول گئے ہیں۔ تیسرے میچ میں پھر پرانی غلطیاں دہرائی گئیں، جس کے باعث شکست یقینی تھی لیکن بارش نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو ایک ہزیمت سے بچایا ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کو اگر اچھی ٹیموں کے ساتھ کھیلنے کا موقع مل رہا ہے تو اس سلسلے میں محنت شاقہ چاہیے ۔ کھلاڑیوں کی فٹنس اور کارکردگی پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہ کیا جائے۔ کورونا کے باعث ایک عرصے تک کیمپ نہیں لگے۔ جس بنا پر کھلاڑیوں کی کارکردگی پر برا اثر پڑا ہے۔
انگلینڈ سے شکست کے بعد کرکٹ ٹیم کو اپنی غلطیوں پر قابو پانا چاہیے، ٹیسٹ سیریز میں جو غلطیاں ہوئی ہیں، وہ دوبارہ نہیں ہونی چاہئیں تاکہ ٹیم جیت سکے۔ پاکستانی ٹیم تین میچوں کی ٹی ٹوئنٹی سیریز کا پہلے میچ 28 اگست کو کھیلے گی۔ یہ پوری سیریز ہی مانچسٹر میں اولڈ ٹریفرڈ کرکٹ گراؤنڈ میں کھیلی جائے گی۔