کھدائی کے دوران دور خلافت عباسیہ کے طلائی سکے برآمد

تل ابیب : اسرائیلی نوجوان کھدائی کے دوران عباسی عہد کے سیکڑوں طلائی سکے دریافت کرلیے، جس پر کلمہ طیبہ بھی کنندہ ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی سرزمین پر قابض ریاست اسرائیل میں محکمہ آثار قدیمہ کےلیے رضاکارانہ طور پر کھدائی کرنے والے نوجوان کو گیارہ سو سال قدیم طلائی سکے مل گئے، کا وزن 845 گرام ہے۔

کھدائی کے دوران برآمد ہونے والے 425 طلائی سکے، خلافت عباسیہ کے دور ہیں جن پر کلمہ طیبہ بھی واضح طور پر کنندہ ہے۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی نوجوان کو ملنے والے طلائی سکے مٹی کے ایک برتن میں بند تھے۔

واضح رہے کہ گیارہ سو سال قبل وسطی اسرائیل کا مذکورہ علاقہ (جہاں سکے برآمد ہوئے ہیں) عباسی خلافت کے زیر انتظام تھا۔

اسرائیلی محکمہ آثار قدیمہ کا کہنا تھا کہ عام طور اتنی بڑی تعداد میں سکے دریافت نہیں ہوتے۔

قدیم سکوں کے ماہر رابرٹ نے کہا کہ مٹی کے جار سے سکوں کے علاوہ سونے کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے بھی برآمد ہوئے ہیں جو ریزگاری کے طورپر استعمال کیے جاتے تھے۔