وزیراعلیٰ سندھ نے صوبے میں رین ایمرجنسی نافذ کردی

وزیراعلیٰ سندھ نے ہدایت دی ہے کہ قدرتی آفات سے نمٹنے والا ادارہ ریلیف کا کام شروع کرے۔ انہوں نے ملازمین کو اپنے محکموں میں رپورٹ کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ضیاالدین روڈ پربارش کے پانی کا جائزہ لیا اور ایوان صدر پر ڈی واٹر سسٹم لگوایا۔ سید مراد علی شاہ صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے آرٹلری میدان روڈ سے آرٹس کونسل اور پاکستان چوک کی طرف روانہ ہو گئے ہیںشہر قائد میں آرٹس کونسل سے نیشنل میوزم تک سڑک پانی سے بھری ہوئی ہے جب کہ موسلادھاربارش کے بعد آرام باغ فرنیچرمارکیٹ بھی زیرآب آگئی ہے۔

علاقہ دکانداروں نے ہم نیوز کو بتایا ہے کہ بارش اور سیوریج کا پانی دکانوں میں داخل ہو گیا ہے جس کی وجہ سے ان کا فرنیچر بہت بری طرح متاثر ہوا ہےدکانداروں نے بتایا ہے کہ فرنیچر مارکیٹ میں اس وقت چار فٹ سے زائد پانی کھڑا ہوا ہے اور نکاسی آب کی کوئی صورت دکھائی نہیں دے رہی ہے