ڈاکٹر کھٹو مل جیون کا صوبے میں گندم, آٹا اور جینی کی قیمتوں میں اضافہ پر تشویش کا اظہار

منافع خوروں اور زخیرہ اندوزوں کے خلاف مزید کاروائی تیز کرنے کے لیے سندھ بھر کے ڈیڑنل کمشنرز کو خطوط ارسال۔

ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنرز اپنی اپنی جوریڈکشن میں گندم, آٹا اور چینی کی سرکاری نرخ پر فروخت یقینی بنانے۔ خط کا متن

کراچی (19اگست) وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز ڈاکٹر کھٹو مل جیون کا صوبے میں گندم, آٹا اور جینی کی قیمتوں میں اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ڈائریکٹر بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز کو ہدایت جاری کہ سندھ بھر کے ڈیڑنل کمشنرز کو صوبے بھر میں گندم, آٹا اور چینی کی قیمتوں میں ناجائز اضافہ روکنے اور زخیرہ اندوزوں کے خلاف قانونی کاروائی مزید تیز کرنے کے لیےخطوط ارسال کئے جائے۔ خط کے متن میں ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنرز کو اپنی اپنی جوریڈکشن میں گندم, آٹا اور چینی کی سرکاری نرخ پر فروخت یقینی بنانے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے بھر میں اشیاء خوردونوش کی کوئی کمی نہیں۔اس ضمن میں ناجائز منافع خوری اور زخیرہ اندوزی کرنے والوں کو کسی قیمت میں نہیں چھوڑا جائے گا۔ بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز کے اعداد و شمار کے مطابق 1جولائی سے ابتک 21 سو سے زائد منافع خوروں اور زخیرہ اندوزوں پر 40 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق صرف کراچی ڈویژن میں 631 منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں پر 28 لاکھ 86ہزار روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔