لاہورمیں موسلا دھار بارش سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے

لاہورمیں موسلا دھار بارش سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے۔ سڑکیں ندی نالوں میں تبدیل ہوگئیں، شہر میں رات سے بارش کا سلسلہ جاری ہے۔ سڑکوں پر پانی جمع ہونے کے باعث شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے اور متعدد شہری گاڑیاں اور موٹر سائیکل بند ہونے سے پریشان ہیں۔ لاہور میں سب سے زیاد ہ بارش لکشمی چوک میں 186 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔
تاج پورہ میں 173 ملی میٹر، اپر مال 141، اور مغلپورہ 74 ملی میٹر بارش ہوئی۔ چوک ناخدا میں 120 ،نشتر ٹاؤن میں 123، پانی والا تالاب میں 141 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی محکمہ موسمیات کے مطابق پنجاب ،خیبر پختونخوا ، اسلام آباد ، کشمیر اور گلگت بلتستان میں تیز ہوائوں اور گرج چمک کے ساتھ بارش جبکہ بالائی پنجاب، بالائی وسطی خیبر پختونخوا اورکشمیر میں موسلادھار بارش کا امکان ہے۔
تاہم شمال مشرقی بلوچستان اور جنوب مشرقی سندھ میں چند مقا مات پر بارش کی توقع ہے۔ دوسری جانب این ڈی ایم اے نےاگلے چند روز کے دوران طوفانی بارشوں کا الرٹ جاری کردیا ۔ کئی علاقوں میں خطرناک سیلابی صورتحال پیدا ہونے کا خدشہ، عوام کو احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کی ہدایت۔ تفصیلات کے مطابق ایک ماہ سے زائد عرصے تک سندھ اور بلوچستان میں موسلادھار بارشیں برسانے کے بعد اب مون سون بارشوں کے سلسلے نے پنجاب اور شمالی علاقہ جات کا رخ کر لیا ہے۔
بتایا گیا ہے کہ بدھ کے روز پنجاب، اسلام آباد، خیبرپختونخواہ، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے بیشتر علاقوں میں موسلادھار بارشیں ہوئیں۔ کئی علاقوں میں اب بھی طوفانی بارش کا سلسلہ جاری ہے۔ جبکہ آئندہ چند روز کے دوران مزید طوفانی بارشیں ہونے کا امکان ہے۔ اس صورتحال میں این ڈی ایم اے کی جانب سے الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ این ڈی ایم اے نے عوام کو ہدایت کی ہے کہ کئی علاقوں میں خطرناک سیلابی صورتحال پیدا ہو سکتی ہے، اس لیے احتیاطی تدابیر اختیار کی جائیں۔