سندھ حکومت کی قیادت میں کراچی کے مسائل حل کرنے کے لئے پیپلز پارٹی پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم کی اعلی سطح کی کمیٹی قائم

سندھ حکومت کی قیادت میں کراچی کے مسائل حل کرنے کے لئے پیپلز پارٹی پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم کی اعلی سطح کی کمیٹی قائم کردی گئی ہے ۔ اس سلسلے میں جو اجلاس ہوا اس میں سینئر فوجی افسر بھی شریک تھے ۔ طے پایا کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کراچی کے مسائل کے حل کے لئے مل کر کاوش کریں گے ۔ یہ بھی نوٹ کیا گیا کہ وفاق وقتا فوقتا اربوں روپے کے جن امدادی پیکجز کا اعلان کرتا رہا ہے اس کا ایک روپیہ بھی نہیں ملا پانی کی فراہمی کے لئے k 4 پر بھی پیش رفت نہیں ہوئی۔ کراچی کی بی آر ٹی کو مکمل کرنے کے 2018 میں کچھ ہی کام باقی تھا وہ بھی وفاق نے پورا نہیں کیا ،۔ مکمل صورت حال کا جائزہ لے کر مسائل کی بھی نشان دہی کی گئی۔ نالوں کی صفائی اور پھر ان پر تجاوزات کے خاتمے کے لئے حکومت کے موقف کی فوج نے بھی تائید کی یہ بھی دیکھا جائے گا کہ نالوں پر یاوسنگ سوسائٹی کیسے بنی۔
دوسری طرف کراچی کے رخصت ہونے والے مئیر وسیم اختر نے تسلیم کیا ہے کہ ان کے پاس اختیارات بھی تھے اور فنڈ بھی استعمال نہیں کرسکے۔ سما ٹی وی نے اس کا انکشاف کیا
دریں اثناء۔۔۔۔ایم کیو ایم کے عامر خان نے کراچی کو ہھر صوبہ بنانے کا مطالبہ کیا ہے جسے پی ٹی آئی اور جی ڈے اے پہلے ہی سختی سے مسترد کرچکی ہیں