جے آئی ٹی نے جعلی بینک اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کا دائرہ پی پی ایچ آئی تک وسیع کردیا

جعلی بینک اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے تحقیقات کا دائرہ حکومت سندھ کے پروجیکٹ پی پی ایچ آئی تک وسیع کردیا ہے اور اس سلسلے میں چیف سیکرٹری اور چار محکموں کے سیکرٹریز کو نوٹس جاری کرتے ہوئے تفصیلات طلب کر لی ہیں ۔ جے آئی ٹی کی جانب سے تحریری طور پر مانگی گئی رسیلات کے حوالے سے چیف سیکرٹری سندھ اور صوبائی محکمہ توانائی، محکمہ خزانہ، محکمہ ہیلتھ، محکمہ امپلیمنٹیشن ایم کوآرڈینیشن کے سیکرٹری سے بھی تفصیلی ریکارڈ طلب کیا ہے پی پی ایچ آئی کے لیے حکومت سندھ نے بھاری فنڈز مختص کئے تھے۔ اس پروجیکٹ کو حکومت سندھ اپنا بہترین پروجیکٹ قرار دیتی رہی جبکہ یہاں تعینات رہنے والے افسران کی ایمانداری کا بھی بہت چرچا رہا۔ اب جے آئی ٹی کی جانب سے اس پروجیکٹ کی تفصیلات اور یہاں پر ہونے والے اخراجات اور مزید تفصیلات مانگی گئی ہیں افسران کے قواعد بھی مانگے گئے ہیں آنے والے دنوں میں اس محکمے کے حوالے سے اہم انکشافات متوقع ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں