انگلینڈ، کھلاڑیوں کو ہروقت خصوصی کارڈ ساتھ رکھنے کی ہدایت

اظہر علی کی قیادت میں پاکستان ٹیسٹ اور بابر اعظم کی قیادت میں ٹی20 اسکواڈ کے اراکین ان دنوں انگلینڈ میں موجود ہیں۔

دورہ انگلینڈ کے پہلے مرحلے میں قومی ٹیم ووسٹر کے بعد اب دوسرے مرحلے میں ڈار بی میں موجود ہے، ووسٹر کے بعد ڈار بی میں بھی کھلاڑیوں کو کہا گیا ہے کہ وہ گراؤنڈ کے واش روم کے برعکس ہوٹل میں اپنے واش روم کا استعمال کریں۔

دوسری جانب بائیو سیکیور ماحول میں انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کی طرف سے قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کے لیے دورے کے ایکریڈٹیشن کارڈ کے ساتھ ایک دوسرا کارڈ جاری کیا گیا ہے۔

دوسرا کارڈ کریڈٹ کارڈ جتنا بڑا ہے اور کھلاڑیوں کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ ہر وقت اپنے ساتھ ایکریڈٹیشن کارڈ کے ہمراہ منسلک دوسرے کارڈ کو رکھیں۔

اطلاعات کے مطابق دوسرے کارڈ کا مقصد کھلاڑیوں کی نقل و حرکت پر نظر رکھنا ہے۔

یاد رہے پاکستان ٹیم غیر معمولی حالات میں اس وقت انگلینڈ میں موجود ہے، جہاں کورونا وائرس کے باعث ہزاروں افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے دورے کے لیے پاکستان کرکٹ ٹیم کے 29 کھلاڑیوں اور 14 آفیشلز کو مدعو کیا ہے جبکہ دورہ انگلینڈ کو پاکستان کرکٹ ٹیم کے ڈاکٹر سہیل سلیم ’ہائی رسک ‘ قرار دے چکے ہیں۔

دورے کے لیے کھلاڑیوں کے لیے جاری کیے گئے دوسرے کارڈ کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ کھلاڑیوں کی نقل و حرکت پر نظر رکھی جائے تاکہ وہ بائیو سیکیور ماحول کی خلاف ورزی کے مرتکب نہ ہوں۔

واجح رہے کہ ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میں انگلینڈ نے فاسٹ بالر جوفرا آرچر کو اس لیے ٹیم سے ڈراپ کیا کہ وہ پہلے ٹیسٹ کے اختتام پر کووڈ 19 پروٹوکول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اپنے گھر چلے گئے تھے۔