فنکاروں کو اپنے خیالات کا اظہار کرنے دیں، عائشہ عمر

پاکستان فلم و ٹی وی انڈسٹری کی معروف اداکارہ عائشہ عُمر نے سوشل میڈیا صارفین سے سوال کیا ہے کہ اپنے خیالات کا اظہار کرنے پر فنکاروں سے نفرت کیوں کی جاتی ہے؟

عائشہ عمر نے فنکاروں پر تنقید کرنے کے حوالےسے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’مجھے یہ سمجھ نہیں آتا کہ کیوں سوشل میڈیا پر فنکاروں اور عوامی شخصیات سے بدتمیزی کی جاتی ہے
اداکارہ نے سوالیہ انداز میں لکھا کہ ’کیوں فنکاروں کو اپنی رائے کا اظہار خیال کرنے اور اپنا موقف اختیار کرنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور پھر سوشل میڈیا پر اُن فنکاروں کے خلاف ایک نفرت انگیز مہم چلائی جاتی ہے۔‘

اُنہوں نے لکھا کہ ’بدتمیزی کرنے کے بجائے احترام کریں اور اگر کسی مسئلے پر مباحثہ کرنا ہے تو تمیز کے دائرے میں رہتے ہوئے کریں، نفرت پھیلانے سے گریز کریں آخر ہم سب ہی انسان ہیں۔‘

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں یاسر حسین نے ترک اداکارہ اسراء بلجیک کو پاکستانی کمپنی کا برانڈ ایمبیسڈر بنائے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا تھا جس کے بعد سے اُنہیں سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے
اِس ضمن میں اداکارہ ارمینہ خان اپنے دوست یاسر حسین کا ساتھ دینے کے لیے میدان میں آگئی تھیں، اُنہوں نے ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا تھا کہ یاسر حسین کو سوشل میڈیا پر ہراساں اور دھونس کا نشانہ بنایا جارہا ہے
ارمینہ خان نے کہا تھا کہ وہ جانتی ہیں کہ یاسر حسین ایک عوامی شخصیت ہیں لیکن اُنہوں نے یاسر کے خلاف سوشل میڈیا پر جو تبصرے اور کمنٹس پڑھے ہیں وہ فرسودہ اور نفرت انگیز ہیں جس طرح ہر پاکستانی کو اپنی رائے کا اظہار خیال کرنے کی اجازت ہے اِسی طرح یاسر حسین کے پاس بھی یہ حق ہے کہ وہ اپنے خیالات کا اظہار کرے۔

اداکارہ نے شدید غصے کا اظہار کرتے ہوئےکہا تھا کہ یاسر اور اُس کی فیملی کو نازیبا ناموں سے پُکارنا بند کریں