تمام دھان فائن خرید کر چاول بنانے والوں کو مشورہ

فائن دھان کی جو آمد آمد ہے گیلی مونجی جو کہ 28سے 32 موسچر تک آرہی ہے کچھ ڈھیریاں 24/26کی بھی آئ ہے غلہ منڈیوں میں اسطرح کا دھان 1400/1600تک کا ریٹ ہے ایوریج ریٹ 1500 کے قریب ہے کم بیش اس پوزیشن کا دھان وہ ہی لے جو فی الفور چاول بنانے کی پوزیشن میں ہو
ایک محتاط اندازے کے مطابق 1500 کے ریٹ کا ایوریج 24/28 نمی والے دھان سے حاصل چاول بمعہ ٹوٹا 20/21کلو تک ہوگا جس میں ٹوٹا 4/5کلو اور چاول 15/16کلو تک ہوگا
جاری دھان کے ریٹ میں حاصل چاول کم از کم 3300/3450 میں پڑے گا لہذا جس نے فی الفور چاول بنانا ہے صرف وہ خریداری کرے جس نے خشک کرکے رکھنی ہے کچھ عرصے بعد چاول بنائیں گے وہ اجتناب کریں
کیونکہ چاول فائن 3200/3400تک پوزیشن کی امید ہےحاضر وقت میں جو بتدریج وقت کے ساتھ ساتھ قیمت کم ہوگی یار لوگ فائن چاول کو عید کے بعد 2700/2800دیکھ رہے ہیں اور بھر پور دھان کی فصل آنے
بے شمار فیکڑیوں کے شروع ہونے پر ہر طرف چاول تیار ہونے پر ستمبر میں 2400/2500 کی امید کی جارہی ہے
یہ باتیں خیالات سوچ بچار ماضی کے حالات پوزیشن اور حالیہ دھان فائن سمیت نان باسمتی کی بمپر کاشت بہترین پیداوار فی ایکڑ اچھی پیدا وار
ان سب کو مد نظر رکھتے ہوئے ہیں احتیاط ضروری ہے بارشیوں کا موسم ہے حبس عروج پر ہوا میں نمی کا تناسب بھی ایسے میں دھان خشک کرکے رکھنا مناسب نہیں
جو چاول بنارہا ہے اسے خریدنے دیں پھر ان کے تجربات معلومات مارکیٹ کی پوزیشن کو مد نظر رکھتے ہوئے خریداری کریں
یہ سال نان باسمتی کے حوالے سے محتاط رہنے کا ہے

2: اس سال جوجتنا صبر تحمل سے کام لے گا نان باسمتی میں وہ اتنا ہی فائدے میں رہے گا انشاءاللہ

3: ماشاءاللہ الحمدللہ
جو نان باسمتی دھان کی بمپر کراپ کاشت ہے اور موسم سمیت ہر معاملہ دھان کی فضل کے حق میں ہے حالیہ ملک بھر میں جاری بارشیں بھی فضل کے لیے بہت مفید ہیں رب کریم کے فضل وکرم سے بہت اچھی فضل رہی گی نان باسمتی کی سابقہ ماضی قریب کے سالوں کی نسبت
دیر میں خیر ہے کے مصدق بات رہے گی
جلدی بازی نہ کریں ہوسکتا ہے الله نہ کرے کہ موٹا نقصان ہوجائے نہ تو دھکی پھک پورا کرے گی نہ ہی ملنگ
بھر پور فضل آنے پر ہی خریداری کریں 20اگست کے بعد