واٹربورڈ اور پولیس کا پانی چوروں اور انسانی صحت کیلئے مضر پانی فروخت کرنے والو ں کے خلاف مشترکہ کریک ڈاون ،ایک ہائیڈرنٹ کا خاتمہ

واٹربورڈ اور پولیس کا پانی چوروں اور انسانی صحت کیلئے مضر پانی فروخت کرنے والو ں کے خلاف مشترکہ کریک ڈاون ،ایک ہائیڈرنٹ کا خاتمہ جبکہ 9 ٹینکرپکڑکر 9 ملزمان گرفتار کرلیئے گئے ،ایم ڈی واٹربورڈ اسداللہ خان نے واٹربورڈ کے ڈسکنکشن اسکوارڈ کو شہریوں کو فراہم کیا جانے والا پانی فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی مزید تیز کرنے کی ہدایت کردی ہے ،ترجمان واٹربورڈ کے مطابق وزیربلدیات وچیئرمین واٹربورڈ کی ہدایات پر واٹربورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹراسداللہ خانmd water board asad ullah khan کی زیر نگرانی واٹربورڈ کے عملے نے پولیس کی مددسے منگھوپیر اور موچکو تھانوں کی حدود میں پانی چوروں اور مضر صحت پانی فروخت کرنے والے ٹینکروں کیخلاف کریک ڈاون کیا ,منگھوپیر اور موچکو تھانوں کی پولیس کی مددسے ایم ڈی واٹربورڈکے فوکل پرسن ریحان اقبال ،ایچ ٹی ایم کے ایگزیکٹوانجینئررحیم پلیجو ،سب انجینئر محمد قیصر اور دیگر نے ٹینکروں کے ذریعے بلوچستان کے علاقے ساکران سے مضرصحت پانی لاکر کراچی کے شہریوں کو فروخت کرنے والے 7ملزما ن ساجد،حمید الرحمن ،رحمان ،علی اکبر، عامر خان ،فیصل احمد ،مشیر احمد کوپکڑکر گرفتار کرادیا جبکہ مضرصحت پانی سے بھرے 9ٹینکرز پولیس نے قبضے میں لے لئے ہیں ملزمان کے خلاف متعلقہ تھانوں میں مقدمات کا اندراج کرادیا گیا ہے ، دوسری جانب واٹربورڈ کی اس ہی ٹیم نے پولیس کے ساتھ خیبر ہوٹل نادربائی پاس کے قریب چھاپہ مار کر غیرقانونی ہائیڈرنٹ کا خاتمہ کردیا ، ملزمان لیاقت اور بادشاہ خان کے خلاف 14اے کے تحت منگھوپیر تھانہ میں مقدمہ درج کرادیا گیا ہے،ملزمان واٹربورڈ کی 48 انچ قطر کی پانی کی لائن سے دو غیرقانونی کنکشن کے ذریعہ پانی چوری کرکے ٹینکروں کے ذریعے فروخت کرتے تھے،علاوہ ازیں ایم ڈی واٹربورڈ نے کہا ہے کہ شہریوں کو فراہم کیا جانے والا پانی چوری کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں ، ڈسکنکشن اسکوارڈ شہریوں کو فراہم کیا جانے والا پانی فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی مزید تیز کریں اور ان کے خلاف 14اے کے تحت مقدمات درج کرائے جائیں