بشریٰ انصاری نے اپنے سخت الفاظ پر معافی مانگ لی

سینئر اداکارہ بشریٰ انصاری نے ڈراموں پر تنقید کرنے والی یوٹیوبر لبنیٰ فریاد پر کی جانے والی تنقیدی پوسٹ کی وضاحت دے دی، انہیں غلطی کا احساس ہو گیا اور انہوں نے معافی بھی مانگ لی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر اداکارہ نے حال ہی میں اپنے سخت الفاظ کے استعمال کرنے پر معذرت کرتے ہوئے ایک پوسٹ شیئر کی ہے۔

بشریٰ انصاری نے اپنی وضاحتی پوسٹ میں سخت الفاظ کے استعمال پر معافی مانگتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی ڈرامہ اور پراجیکٹ جس میں ہم کام کرتے ہیں وہ ہمارے لیے ہماری اولاد جیسا ہوتا ہے جو ہم اپنے شائقین کی محبت کے ساتھ پیدا کرتے ہیں، اسی لیے جب کوئی اس کا مذاق اڑاتا ہے تو ہمیں افسوس اور دکھ ہوتا ہے
انہوں نے مزید کہا کہ ہر ایک کو ہمارا کام پسند یا ناپسند کرنے کا حق ہے، تاہم مجھے احساس ہے کہ میں نے اپنی پوسٹ میں سخت الفاظ کا استعمال کیا ہے۔

انہوں نے لکھا کہ مجھے اپنی غلطی کا احساس بھی ہوگیا اور میں نے اس پوسٹ کو ہٹا بھی دیا لیکن افسوسناک بات ہے کہ سوشل میڈیا پر ایک تماشا کھڑا ہوگیا ، مجھے احساس ہے کہ میں اپنا غصہ ٹھیک طریقے سے ہینڈل نہیں کرپائی۔
بشریٰ انصاری نے تنقیدی پوسٹ کی طرح اپنی وضاحتی پوسٹ بھی کچھ وقت بعد ہی ڈیلیٹ کردی۔

واضح رہے کہ بشریٰ انصاری نے سوشل میڈیا پر پاکستانی ڈراموں کے کرداروں پر بےجا تنقید کرنے والوں کی کلاس لیتے ہوئے انہیں زندگی میں ’کورونا‘ قرار دیا تھا
سینئر اداکارہ نے لکھا تھا کہ اُن کا یہ ماننا ہے کہ جب لوگوں کے پاس کرنے کو کچھ نہ ہو تو وہ ان لوگوں سے حسد کرنا اور اپنے جاہل ہونے کا ثبوت دینا شروع کر دیتے ہیں جو اپنی فیلڈ میں کچھ کررہے ہوں