منرل واٹر اور مشروبات کمپنیز کو 10، 10 ہزار پودے لگانے کا پابند بنایا جائے۔ چیف سیکریٹری سندھ

زیر زمین پانی کا منرل واٹر اور مشروبات کمپنیز کے استعمال پر ٹیکس وصولی پر چیف سیکریٹری سندھ کی صدارت میں اہم اجلاس۔ اجلاس میں سپریم کورٹ کی قائم کمیٹی کے کنوینئر پروفیسر احسان صدیقی اور سندھ فوڈ اتھارٹی اور سندھ انوائرمینٹ ایجنسی کے افسران کی بریفنگ 10 منرل واٹر اور مشروبات کمپنیز سے پانی ٹیکس کی مد میں 40 کروڑ روپے سے زائد وصول ہونے ہیں۔ 10 بڑے منرل واٹر کمپنیز کے کراچی، سکھر اور حیدرآباد 53 لاکھ سے زائد پانی یومیہ استعمال کیا جاتا ہے۔ متعلقہ ڈپٹی کمشنر، لوکل گورنمنٹ اور انوائرمینٹ ایجنسی مل کر ٹیکس وصول کریں گے۔ چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ تمام منرل واٹر اور مشروبات کمپنیز کو 10، 10 ہزار پودے لگانے کا پابند بنایا جائے۔ سندھ فوڈ اتھارٹی کو ایک مضبوط ادارہ بنایا جا رہا ہے جو مستقبل میں ان کمپنیز پر چیک اینڈ بیلنس رکھے گا۔ سندھ فوڈ اتھارٹی کی کراچی یونورسٹی میں لیباریٹری بنائی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں