پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں 153 پوائنٹس کا اضافہ

اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کے پہلے روز کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا۔ کے ایس ای 100 انڈیکس کا آغٓاز 35 ہزار 51 پوائنٹس پر ہوا تھا اور ابتدا میں ہی 101 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور انڈیکس 35 ہزار 152 پوائنٹس پر ٹریڈ کرتا نظر آیا۔

کاروبار کے دوران 49 پوائنٹس کی کمی بھی ریکارڈ کی گئی اور انڈیکس 35 ہزار 2 پوائنٹس تک گر گیا تھا تاہم جلد ہی اسٹاک مارکیٹ مثبت زون میں ٹریڈ کرنے لگا۔

دوپہر 12 بجے انڈیکس 187 پوائنٹس اضافے کے ساتھ 35 ہزار 238 پوائنٹس پر ٹریڈ کرتے دیکھا گیا۔

کاروبار کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس میں 117,513,244 حصص کا لین دین ہوا جس کی مالیت پاکستانی روپوں میں 4,633,468,855 بنتی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز عالمی بینک نے پاکستان کے لیے 50 کروڑ ڈالرز قرض کی منظوری دے دی تھی۔

جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا تھا کہ قرض کی منظوری ایگزیکٹیو ڈائریکٹرز بورڈ اجلاس میں دی گئی۔ قرض کی رقم معاشی اصلاحات پر خرچ کی جائے گی۔

قرض کی رقم کورونا پر قابو پانے کے لیے بھی خرچ کی جائے گی جبکہ 25 کروڑ ڈالرز انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ ایسوسی ایشن نے فراہم کیے۔

اعلامیہ کے مطابق 25 کروڑ ڈالرز انٹرنیشنل بینک برائے ترقی و بحالی نے فراہم کیے ہیں۔ پاکستان کو یہ قرض آسان شرائط پر فراہم کیا گیا ہے۔

دریں اثناء گزشتہ روز اسٹیٹ بینک نے روزگار اسکیم میں مزید 3 ماہ کے لیے توسیع کر دی تھی۔

ترجمان اسٹیٹ بینک نے کہا تھا کہ اپریل تا جون فنانسنگ حاصل کرنے والے جولائی تا ستمبر اسی تناسب سے فنانسنگ حاصل کرسکیں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ کہ اسکیم کےتحت بینکوں نے 1653 اداروں کے لیے 19 جون تک 112.80 ارب روپے فناسنگ کی منظوری دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں کورونا، ایشین انفرا اسٹرکچر بینک پاکستان کو 50 کروڑ ڈالر قرض دے گا

اسٹیٹ بینک کے مطابق اسکیم سے 19 جون تک 10 لاکھ افراد کا روزگار بچایا گیا ہے جبکہ حکومت نےاسکیم کی رسک شیئرنگ 40 سے بڑھا کر60 فیصد کر دی ہے

Courtesy hum news