پنجاب میں 48 سرکاری ڈاکٹرز مستعفی

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے مختلف سرکاری ہسپتالوں سے منسلک 48 ڈاکٹرز نے استعفے دے دیے جو محکمہ صحت کی جانب سے جاری ایک نوٹیفیکشین کے مطابق منظور کر لیے گئے ہیں۔

سرکاری نوٹیفکیشین میں صوبہ بھر کے مخلتف ہسپتالوں سے مستعفی ہونے والے ڈاکٹروں کو نام اور پتے درج ہیں اور بتایا گیا ہے کہ ان ڈاکٹروں کے استعفے منظور کر لیے گئے ہیں۔

لاہور کے میو ہسپتال میں کام کرنے والے 14 ڈاکٹرز جبکہ جناح ہسپتال سے سات، چلڈرن سے چھ، جنرل ہسپتال سے تین، سروسز، لیڈی ایچی سن ہسپتال اور گورنمنٹ نواز شریف ہسپتال سے بھی دو ڈاکٹروں کے استعفے منظور ہوئے ہیں۔

لاہور کے کوٹ خواجہ سعید ہسپتال، شاہدرہ ٹیچنگ ہسپتال اور میاں منشی ہسپتال سے ایک ایک ڈاکٹر مستعفی ہوئے۔

فیصل آباد کے الائیڈ اسپتال سے دو، ڈی جی خان ہسپتال سے چار ڈاکٹروں نے استعفے دیے جو منظور کیے گئے۔

گوجرانوالہ ٹیچنگ ہسپتال سے ایک ڈاکٹر کا استعفی منظور کیا گیا ہے۔ سول ہسپتال بہاولپور، شیخ زید ہسپتال رحیم یار خان سے دو، دو ڈاکٹروں نے استعفے دیے ہیں۔

تاحال ان ڈاکٹرز کے مستعفی ہونے کی وجہ سامنے نہیں آ سکی اور نہ سرکاری طور پر یہ بتایا گیا کہ ان ڈاکٹرز کی جگہ کتنے ڈاکٹروں کو بھرتی کیا گیا ہے۔

Pakistan24.tv-report