میڈیا سے رابطہ جرم بن گیا۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔

اس جرم پر پی آئی اے سے دو افسران کی ملازمت ختم کردی گئی۔
پی آئی اے ملک کا واحد اور اولین سرکاری ادارہ ہے جس کے ایک افسر کو سوشل میڈیا پر ادارے سے متعلق اظہار خیال کرنے کی وجہ سے برطرف کیا گیا۔

پی آئی اے میں ملازمین کی برطرفیاں۔۔۔۔۔۔۔۔۔

٭ ماہ جون میں52 ملازمین کو جعلی تعلیمی اسناد اور میڈیا سے رابطہ رکھنے پر برطرف کیا گیا۔
٭ برطرف ملازمین میں کوئی پائیلٹ شامل نہیں ہے۔
٭ 25 افسران اور ملازمین تعلیمی اسناد جعلی یا ان میں تبدیلی کرنے پر برطرف ہوئے۔
٭ 21 افسران اور ملازمین بغیر اطلاع لمبی چھٹیاں کرنے پر برطرف ہوئے۔
٭ سوشل میڈیا پر پی آئی اے انتظامیہ کی پالیسیوں پر تنقید کرنے پر گروپ 6 کے افسر عرض بھٹو ملازمت سے برطرف۔
٭ میڈیا سے رابطے کے الزام میں دو ملازمین برطرف۔
٭ ایک ملازم کو ڈیوٹی کے مقام سے غائب پانے پر برطرف کیا گیا۔
٭ میڈیا سے رابطے کے الزام میں دو ملازمین کی نچلے گروپ میں تنزلی بھی کی گئی۔
٭ برطرف ملازمین میں منیجر اسسٹنٹ منیجر اور سینیر آفیس بھی شامل ہیں