وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت کورونا وائرس ٹاسک فورس اجلاس

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت کورونا وائرس ٹاسک فورس اجلاس

اجلاس میں صوبائی وزراء، میئر کراچی، چیف سیکریٹری، اے سی ایس داخلہ، ڈی جی رینجرز، بریگیڈیئر سمیع، صوبائی سیکریٹریز، ڈبلیو ایچ او، ایف آئی اے، پاکستان نیوی، ایئرپورٹ کے نمائندے شریک

اجلاس میں بتایا گیا کہ پورے پاکستان میں 225283 کورونا کے کیسز ہیں

سندھ میں 90721 کیسز ہیں، بریفنگ

پورے ملک کا کورونا وائرس کے باعث اموات کی شرح 2.5 فیصد ہے جب کہ سندھ میں 1.61 فیصد ہے، بریفنگ

کے پی کے میں اموات شرح 3.62 فیصد، بلوچستان 1.14 فیصد، گلستان بلتستان میں 1.82 فیصد، اسلام آباد میں 0.98 فیصد، پنجاب میں 2.3 فیصد ہیں، بریفنگ

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ ہم نے ہیلتھ کیئر سسٹم کو بہتر کرکے کورونا اموات کو قابو کیا ہے

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ پورے ملک میں 125094 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جس میں سندھ کے 50908 مریض صحتیاب ہوئے

سندھ کی صحتیابی کی شرح 56 فیصد، پنجاب 53 فیصد، کے پی کے 56 فیصد، اسلام آباد 65 فیصد، گلگت بلتستان 77 فیصد، بلوچستان 50 فیصد اور آزاد کشمیر 57 فیصد ہے

سندھ میں اس وقت 38354 مریض زیر علاج ہیں

پنجاب میں 35599 مریض، کے پی کے میں 10984 مریض، اسلام آباد 4552، گللگت بلتستان 323، بلوچستان میں 5264 اور آزاد کشمیر میں 494 مریض زیر علاج ہیں

اس حساب سے سندھ میں سب سے زیادہ مریض زیر علاج ہیں، وزیراعلیٰ سندھ

سندھ میں کورونا وائرس مریضوں کیلیے 10985 بستر ہیں، پنجاب میں 9276، اسلام آباد میں 5440، اسلام آباد میں 541، گلگت بلتستان میں 151، بلوچستان میں 1103 اور اے جے کے میں 918 بیڈ ہیں

سندھ میں کورونا وائرس کے مریضوں کیلیے بہتر سہولیات کا بندوبست کیا گیا ہے،و زیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ ہم نے کوشش کی ہے کہ کورونا وائرس کے مریضوں کا علیحدہ علاج کیا جائے، وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ کہا کہ سندھ اور دیگر صوبوں کے درمیان موازنہ کرنے کا مطلب اپنے سہولیات کا جائزہ لینا ہے

گزشتہ 33 دنوں میں سندھ نے 300247 ٹیسٹ کئے ہیں جب کہ پنجاب میں 286049، خیبر پختونخواہ نے 93377، اسلام آباد 90557، گلگت بلتستان 5100، بلوچستان 26008 اور آزاد کشمیر نے 10351 ٹیسٹ کئے ہیں، وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ واحد صوبہ ہے جس نے کورونا مریضوں کیلیے اسپتال قائم کرکے شروع بھی کردیے