نہ ہم آخری چوائس ہیں نہ مائنس ون ہیں : شیخ رشید

وزیر ریلوے شیخ رشید نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئےکہا کہ عمران خان بہت محنت کررہے ہیں اور جتنی ہمت ہے حکومت چلانے کی کوشش کررہے ہیں ، نہ ہم آخری چوائس ہیں اور نہ ہم مائنس ون ہیں، لیکن اگر مائنس کی بات آئی تو پھر مائنس تھری ہوگا ۔تحریک انصاف کی حکومت آئینی مدت پوری کریگی اورعمران خان وزیراعظم رہیں گے ۔
شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی والے اپنے گندے کپڑے ٹی وی پر نہ دھوئیں، اپوزیشن وہ کام نہیں کررہی جو بعض سرکاری وزرا حکومت کے خلاف خود کررہے ہیں، اپوزیشن ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتی، حکومت کو کچھ نہیں ہوگا، ثابت ہو چکا ہے یہ کرپٹ ہیں ۔اپوزیشن کی دونوں پارٹیاں کرپشن میں رنگے ہاتھوں پکڑی ہوئی ہیں، اتنے سنگین کیسز ہیں کہ ان کی جان نہیں چھوٹ سکتی۔
انہوں نے مزید کہا کہ یہ سال ریلوے کا ہے ریلوے زندہ ہونے جا رہی ہے ، ریلوے کرایوں میں اضافے کی تجویز مسترد کردی ہے، ایم ایل ون انقلابی منصوبہ ہے جس سے ڈیڑھ لاکھ لوگوں کو روزگار ملا ہے ، اللہ نے ہم سے کام لیا تھا ہم نے ایم ایل ون پر سائن کیا ۔ پہلے بھی ریلوے ملازمین کو ہم نے روزگار دیا تھا ۔وزیر اعظم چین سمیت جہاں بھی گئے ایم ایل ون پر بات کی ۔ ایم ایل ون آج حقیقت بن چکا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ریلوے میں کرپشن کرنے والوں کیخلاف نیب میں رجوع کا فیصلہ کیا ہے ، میں تمام کیسز نیب کو بھیجنے لگا ہوں کہ ان کو اوپن کیا جائے۔
انہوں نے کورونا سے متعلق تجربے کاذکر کرتے ہوئے کہا کہ کورونا بہت سنگین اور خوفناک بیماری ہے، میں نے 14 وزارتیں چلائیں لیکن ایک بھی انجکشن نہیں مل سکا۔ یہ بیماری اللہ کسی دشمن کو بھی نہ لگائے اور شہباز شریف کو بھی صحت دے، فوج کورونا اور ٹڈی دل کے خلاف جنگ کررہی ہے اورسرحدوں پر بھی دفاع کر رہی ہے ۔
وزیر ریلوے نے شیخوپورہ ٹرین حادثےسے متعلق کہا کہ شیخوپورہ حادثے کی بنیادی وجہ پھاٹک کا بند ہونا تھا۔

Courtesy gnn news