پاکستان اسکول عزیزیہ کے سابق پرنسپل اور سینئر ترین استاد راجہ محمد اقبال خالق حقیقی سے جا ملے

جدہ (امیر محمد خان سے ) پاکستان اسکول عزیزیہ کے سابق پرنسپل اور سینئر ترین استاد راجہ محمد اقبال آج خالق حقیقی سے جا ملے ۔۔راجہ محمد اقبال کو جدہ میں پاکستان قونصلیٹ کے اس وقت کے افسران نے اپنی مرضی کا پرنسپل تعنیات کرنے کیلئے مختلف مقدمات کے تحت مقامی انتظامیہ کو شکایت کرکے ان پر جھوٹے مقدمات لگا کر  دوسال پہلے گرفتار کرایا تھا قونصلیٹ کے متعلقہ افس ۔ راجہ اقبال کی بیگم بھی اسکول مین سینئر ٹیچر رہی ہین جنہیں برطرف کردیا گیا تھا۔اسکے علاوہ راجہ اقبال کا ساتھ دینے والے دیگر سینئر اساتذہ کو بھی برطرف کیا گیا ۔ انکی بیگم نے سفیر پاکستان ۔۔قونصلیٹ جدہ ۔۔پاکستان مین وزیر اعظم عمران خان و دیگر وزراء تک اپنے مسائل پہنچائے مگر ما سوائے جھوٹے وعدوں کے کسی نے کچھ نہ کیا ۔ انکی بیٹی اور صاحبزادے کے تعلیمی سال ضائع ہونے ۔ انکی ایک صاحبزادی پاکستان مین ہین ۔پاکستان کمیونٹی کے تمام حلقوں ،پاکستان جرنلسٹ فورم ،اسکول کے اساتذہ، سفیر پاکستان راجہ علی اعجاز ،قونصل جنرل خالدمجید نے راجہ اقبال کی بیوہ سے اظہار تعزیت و انکے درجات کی بلندی کی دعا کی ہے ۔ اساتذہ نے نوائے وقت کو بتایاکہ راجہ اقبال روز قیامت ان تمام پاکستان کے سفارتکاروں اور پاکستان کے وزراء کا گریبان پکڑیں گے جنکی وجہ سے راجہ اقبال بیماری کے باوجود دو سال سے زیادہ عرصہ جیل مین رہے ۔اور اپنے اوپر بنائے جھوٹے مقدمات سہتے رہے۔