کوسٹ گارڈ کی دیوار گرانا شروع کی تو اندر سے درجنوں شادی ھال برآمد

ابراھیم حیدری سے باھر نکل کر چنگی سے کورنگ ڈھائ نمبر جانے والے روڈ پر برسوں سے دیکھتے آرہے تھے

کوسٹ گارڈ کا بڑا سا ایریا گیٹ پر بڑے پہرے ابھی آھستہ آھستہ جب کوسٹ گارڈ کی دیوار گرانا شروع کی تو اندر سے

درجنوں شادی ھال برآمد ھوئے ہیں ان تصویروں میں آپ واضح دیکھ سکتے ھو دیوار پر مخصوص کلر بھی ھے۔۔

کافی عرصہ کوسٹ گارڈ نے شہر کے بیچوں بیچ کراچی پریس کلب سے چند قدم کے فاصلے پر مین سڑک کا ایک حصہ سیکورٹی نقطہ نظر سے رکاوٹیں کھڑی کر کے اپنے تسلط میں کر رکھا تھا جس کی وجہ سے شہریوں کو وہاں سے گزرنے میں کافی مشکلات کا سامنا تھا بالآخر عدالت کے نوٹس لیے جانے کے بعد یہ سڑک خالی کی گئی بنا پوسٹ گارڈ گیسٹ ہاؤس کے سامنے سڑک کا ایک حصہ اور پوری فٹ پاتھ سیکورٹی کے نام پر گھیر لی گئی تھی اس حوالے سے چیف جسٹس پاکستان اور وزیراعلی سندھ کو شکایت کی گئی تھی تب کہیں جا کر یہ غیر قانونی قبضہ ختم ہوا تھا ۔