ضلع غربی، ملیر اور جنوبی میں اسمارٹ لاک ڈاؤن میں توسیع

اسمارٹ لاک ڈاون کا پہلا مرحلہ ختم ہوتے ہی محکمہ صحت کی سفارشات کے پیش نظر تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں وسعت کے نوٹیفیکیشن جاری کرنا شروع کر دیے ہیں۔ ضلع غربی، ملیر اور جنوبی میں لاک ڈاون سخت کرنے کے احکامات جاری کر دیے گئے۔

پہلے مرحلے کا اختتام ہوا تو کمشنر کراچی کے ترجمان نے جلد دوسرے مرحلے کی نوید سنائی جس کے بعد ضلع غربی کے ڈپٹی کمشنر نے ضلع کے 5 ٹاونز کی 6 یونین کونسل میں لاک ڈاون 15 روز مزید جاری رکھنے کا اعلان کیا۔ اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا نوٹیفکیشن ڈپٹی کمشنر غربی فیاض سولنگی نے ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسر کی تجویز پر مختلف علاقوں میں کیا
ضلع غربی میں اورنگی ٹاون کی یوسی 11 داتا نگر ایریا 7 اے اور بی، یوسی 12 مجاہد کالونی، ملت آباد، گلفام آباد، علی گڑھ کالونی اور سایٹ ٹاون شامل ہیں۔

یوسی 4 میٹرول بلاک 1، 2، 3، 4 اور 5، بلدیہ ٹاون یوسی 5 سعید آباد ایریا 5 جی، 5 جے اور اے 3، گڈاپ ٹاؤن، یوسی 5 سونگل، گلشن معمار بلاک ایکس، وائی اور بلاک زیڈ شامل ہیں جبکہ کیماڑی ٹاون میں یوسی 3 کیماڑی، ڈاکس اور مجید کالونی کے علاقے شامل ہیں۔

نوٹیفیکیشن کے مطابق ضلع غربی کے 5 ٹاونز کی 6 یونین کونسل میں سخت لاک ڈاون رہے گا۔ ملیر اور ضلع کورنگی میں جمعہ کو نوٹیفکیشن متوقع ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق ضلع غربی کی 6 یونین کونسل میں 3لاکھ 95ہزار 600 افراد رہتے ہیں۔

ضلع جنوبی کے لاک ڈاون والے علاقوں میں کلفٹن، ڈیفنس، لیاری، کھارادر، گارڈن اور دیگر علاقے شامل ہیں جبکہ ڈیفینس خیابان راحت کے تمام کمرشل علاقے مکمل طور پر بند رہیں گے۔ کلفٹن بلاک 4 اور 5 میں کاروباری مراکز بند رہیں گے اور باتھ آئی لینڈ میں مکمل طور پر لاک ڈاون رہے گا۔

کھارادر کے علاقوں میں مچھی میانی مارکیٹ اور کھوڑی گارڈن شامل ہیں جبکہ گارڈن کے علاقوں میں ڈولی کھاتہ، شو مارکیٹ، ہری مسجد اور جیلانی مسجد کے علاقے شامل ہیں۔

لیاری میں مدنی روڈ اور موسیٰ لین کے علاقے میں مکمل لاک ڈاون رہے گا جبکہ صدر کے علاقوں میں صرف بزرٹا لین کے علاقے میں مکمل لاک ڈاون رہے گا۔

نوٹیفکیشن میں ہدایت کی گئی ہے کہ لاک ڈاون میں بغیر ماسک کے اندر اور باہر جانے کی اجازت نہیں ہوگی جبکہ علاقے میں آنے اور جانے والوں کی مانیٹرنگ کی جائے گی۔ گھر کے صرف ایک فرد کو شناختی کارڈ دکھا کر خریداری کرنے کی اجازت ہوگی۔

کسی قسم کی تقریب کی اجازت نہیں ہوگی، مریض کے ساتھ صرف ایک تیماردار باہر جانے دیا جائے گا، بغیر وجہ کے گھر سے باہر نہیں جانے دیا جائے گا جبکہ ڈبل سواری اورتمام پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی ہوگی۔ سخت لاک ڈاؤن کے دوران گروسری اور میڈیکل اسٹور کے علاوہ تمام کاروبار بند رہے گا۔

متاثرہ علاقوں میں انڈسٹریز بھی بند رہیں گی جبکہ ہوٹلز، ریسٹورنٹ سے ٹیک اوے اور فوڈ ڈلیوری بھی بند ہوگی۔ ڈپٹی کمشنرز کی ذمہ داری ہوگی کہ لاک ڈاون پر عمل درآمد کروائیں اور خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی

Courtesy Samaa News