یونیورسٹی روڈ پر 50 بستروں پر مشتمل متعدد بیماریوں کا اسپتال جمعے سے فعال ہوگا، مراد علی شاہ

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ این ای ڈی یونیورسٹی کے عقب میں یونیورسٹی روڈ پر قائم انفیکٹیوس ڈیزیز اسپتال (آئی ڈی ایچ) آئندہ جمعہ سے آپریشن شروع کردے گا۔ انہوں نے یہ ہدایات بدھ کی صبح اسپتال میں اپنے دورے کے دوران وزیر صحت ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو اور وی سی ڈاؤ یونیورسٹی کو دیں۔ وزیراعلیٰ سندھ کے ہمراہ وزیر صحت ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو بھی تھیں۔ مراد علی شاہ نے 50 بستروں پر مشتمل دو منزلہ اسپتال کا دورہ کیا جس میں 6 بستروں پر مشتمل آئی سی یو اور ایک ہائی ڈیپیڈنسی یونٹ بھی ہے۔ انہوں نے ہر ایک وارڈ کا دورہ کیا اور ذاتی طور پر شعبہ ریڈیولاجی، وینٹی لیٹرز، آکسیجن سسٹم اور آئی ٹی یونٹ کا معائنہ کیا۔ واضح رہے کہ یہ ڈاؤ یونیورسٹی ڈینٹل اسپتال ہے جس کو وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی نے ضروری فنڈز اور عملہ دے کر انفیکٹیوس ڈیزیز اسپتال میں تبدیل کردیا ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے محکمہ صحت کو ہدایت کی کہ وہ اسپتال میں تربیت یافتہ ہیلتھ کیئر عملہ کی تعیناتی کریں اور اسے جمعہ سے فعال بنائیں۔ انہوں نے کہا یہ اسپتال کوویڈ 19 کے مریضوں- کے علاج میں بہت مددگار ثابت ہوگا یہاں تک کہ ان میں سے کسی کو آکسیجن یا وینٹی لیٹرز کی ضرورت پڑجائے تو وہ بھی یہاں دستیاب ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایکس رے یونٹ / ریڈیولاجی ڈیپارٹمنٹ کی سہولت جن مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ان کی سینے کے امراض کی تشخیص کرکے ان کی جان بچانے میں بھی مددگار ہوگا۔ انہوں نے کہا یہ ایک بہترین سہولت ہے جو COVID-19 مریضوں کو مکمل صحت کی دیکھ بھال فراہم کرے گا۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ آئندہ 15 سے 20 روز کے اندر COVID-19 مریضوں کیلئے 200 بستروں پر مشتمل ایک اسپتال NIPA میں کام کرنا شروع کردے گا۔ انہوں نے کہا الحمد اللہ ! ہم کراچی میں کورونا مریضوں کیلئے علیحدہ صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات قائم کرنے میں کامیاب ہوچکے ہیں اور ہم اسے ہر ڈویژنل ہیڈ کوارٹر میں بڑھا رہے ہیں۔
عبدالرشید چنا
میڈیا کنسلٹنٹ وزیراعلیٰ سندھ