وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت امن و امان پر اہم اجلاس

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت امن و امان پر اہم اجلاس

اجلاس میں چیف سیکریٹری، ڈی جی رینجرز، آئی جی پولیس، اے سی ایس داخلہ، ایڈیشنل آئی جی کراچی، ایڈیشنکل آئی جی سی ٹی ڈی، اور خفیہ اداروں کے اعلیٰ حکام شریک

اسٹاکاایکسچینج پر حملہ ایک دہشتگردی ہے، اس کو برداشت نہیں کرسکتے، وزیراعلیٰ سندھ

جب چند دن پہلے گھوٹکی، لاڑکانہ اور کراچی میں ایک ہی وقت میں حملے ہوئے تو مزید اقدامات کرنے کی ضرورت تھی، وزیراعلیٰ سندھ

پولیس اور رینجرز نے بروقت کاروائی کرکے بہترین کام کیا، وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ نے انٹیلیجنس کے کام کو مزید تیز کرنے کی ہدایات دے دی

ٹارگیٹڈ آپریشن تیز کیا جائے، وزیراعلیٰ سندھ

مجھے اپنے اداروں پر بھروسہ ہے کہ اہم تنصیبات، کاروباری مراکز اور عوام کی حفاظت میں کسر نہیں چھوڑیں گے، وزیراعلیٰ سندھ

اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ وک بتایا گیا کہ 8 منٹوں مین پولیس اور رینرجز نے آپریشن مکمل کیا، بریفنگ

حملے میں ایک پولیس سب انسپیکٹر محمد شاہد، سیکیورٹی گارڈ افتخار اور ایک نامعلوم شخص شہید ہوگئے، وزیراعلیٰ سندھ

حملے میں 2 اسٹاک ایکسچینج کے گارڈ اور 3 پولیس اہلکار زخمی ہوئے، وزیراعلیٰ سندھ

زخمیوں کی حالت بہتر بہتر ہے، وزیراعلیٰ سندھ

4 دہشتگرد مارے گئے، وزیراعلیٰ سندھ کو آگاہی

وزیراعلیٰ سندھ نے تمام داخلی و خارجی راستوں پر نگرانی بڑھانے کی ہدایت

اس نگرانی کا اطلاق تمام شہروں اور صوبائی سرحروں پر ہوگا، وزیراعلیٰ سندھ

ہمیں اپنے کاروباری دوستوں کو بہترین سیکیورٹی دینی ہے، وزیراعلیٰ سندھ

دہشتگردوں کی نادرا کے ذریعے شناخت کی جائے، وزیراعلیٰ سندھ

وہ زخمی پولیس اہلکاروں سے ملے گا، وزیراعلیٰ سندھ

وزیراعلیٰ سندھ نے پولیس اور رینجرز کو شاباش دی

جن بہادر پولیس اہلکاروں اور رینجرز کے اہلکاروں نے کاروائی میں حصہ لیا میں انکو سراہتا ہوں، وزیراعلیٰ سندھ

میری شاباشی ان تک پہنچنی چاہیے، وزیراعلیٰ سندھ