اسٹاک ایکسچینج حملہ، ایک کیمرہ مین کی تصویر

اسٹاک ایکسچینج حملہ، ایک کیمرہ مین کی تصویر اُس کی حالت زار بیان کررہی ہے، اگر اس کیمرہ مین سے یہ فوٹیج مس ہوجاتی تو بیورو چیف اسے کس قدر باتیں سناتا، اور یہ بھی ممکن ہے کہ اسے شوکاز نوٹس یا وارننگ لیٹر دے دیا جاتا۔

یہ تو ایک تصویر ہے، حقیقت یہ ہے کہ کئی کیمرہ مین ہیں جن کے پاس چپلیں خریدنے تک کے پیسے نہیں، عرصہ ہوگیا انہوں نے اپنے خود کے لیے کپڑے بھی نہیں خریدے۔

کئی کارکن ان ہی حالات کا مظاہرہ کررہے ہیں، بیشتر کو تنخواہیں کم وہ بھی وقت پر نہیں ملتیں، میڈیا میں بیٹھے سینئر رہنما جن کی طرف ایسے غریب کارکنان امید کی نظر سے دیکھتے ہیں وہ بھی کچھ نہیں کرتے بلکہ ہر ماہ بھاری تنخواہیں اور مراعات لے کر اچھی سی زندگی گزارتے ہیں۔

وقت ایک سا نہیں رہتا، اس سے پہلے بہت دیر ہو، ہم کو مل کر آواز اٹھانا پڑے گی، ورنہ پھر ایک وقت ہوگا کہ آخری گفتگو کی تصاویر شیئر کر کے ہم افسوس کررہے ہوں گے۔

عمیر دبیر