امریکا میں کورونا بے قابو، ایک دن میں ریکارڈ 45 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ

امریکا میں کورونا وائرس بدستور بے قابو ہے ، ایک دن میں ریکارڈ 45ہزار سے زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے، جویومیہ متاثرین کی تعداد میں اب تک کا سب سے بڑا اضافہ ہے۔

امریکا میں متاثرین کی کل تعداد ساڑھے 25 لاکھ سے تجاوز کرگئی جبکہ ایک لاکھ ستائیس ہزار افراد جان سے گئے، کیلیفورنیا ،نیوجرسی، ٹیکساس سمیت دیگر ریاستوں میں کیسز میں تیزی سے اضافہ ہورہاہے۔

کیسز میں اضافے کے باعث مختلف ریاستوں میں لاک ڈاون میں نرمی کرنے سے انکار کردیا گیا، ڈاکٹر انتھونی فاوچی کا کہنا ہے کہ قوم کو کورونا وبا کی صورت میں سنجیدہ مسئلے کا سامنا ہے۔

یاد رہے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ کے سربراہ ڈاکٹرانتھونی فاؤچی نے کانگریس میں بیان دیتے ہوئے کہ ابھی تک کورونا کی ویکسین تیار نہیں کی جاسکی، اس کے علاوہ کورونا وائرس کا کوئی باقاعدہ علاج بھی موجود نہیں ہے، پلازما، ڈیکسامیتھاسون، ریمڈیسوئر سے کچھ مریضوں کو ٹھیک کرنے میں مدد دی، وبا کے پھیلاؤ پر قابو پانا ابھی بھی انتہائی مشکل ہے۔

ڈاکٹرانتھونی فاؤچی نے کہا تھا کہ کورونا ویکسین کی تیاری پر تیزی سے کام جاری ہے، دسمبر یا جنوری میں کورونا ویکسین دستیاب ہونے کا امکان ہے، اس ویکسین کی تیاری فیزتھری میں داخل ہوچکی ہے، ویکسین کی فراہمی کیلئے کروڑوں خوراکیں تیار کی جائیں گی، ثابت ہوا ہے کہ ماسک پہننے سے وبا کے پھیلاؤ میں کمی آتی ہے۔

Courtesy ary news