رٹ پیٹیشن کی سماعت چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ اطہر من اللہ نے کی

سنتھیا رچی کیخلاف رٹ پیٹیشن پراسلام آباد ہائی کورٹ میں سماعت ،

رٹ پیٹیشن کی سماعت چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ اطہر من اللہ نے کی،

چیف جسٹس نے کیس کی سماعت کے بعد سنتھیا رچی، ایف آئی اے سمیت سب رسپانڈنٹس کو نوٹس جاری کئے،

سنتھیا رچی کیخلاف رٹ پیٹیشن پر سماعت 3 جولائی کو ہوگی،

سنتھیا رچی کیخلاف رٹ پیٹیشن افتخار احمد و تنویر احمد نے دائر کی ہے،

درخواست گزار نے سنتھیا رچی کے پاکستان میں غیر قانونی طور پر رہنے اور مشکوک سرگرمیوں پر سوالات اٹھائے ہیں،

درخواست گزار نے سنتھیا رچی کا فوری طور پر پاکستان سے ڈی پورٹ کرنے کی استدعا کی ہے،

سنتھیا رچی کا ویزا مارچ 2020 کے مہینے میں ختم ہوا جس کے بعد ان کا پاکستان میں قیام غیر قانونی ہے،

ویزہ ختم ہونے پر ایف آئی اے کو قانونی طور پرسنتھیا رچی کو پاکستان بدر کرنا چاہئے تھا،

ایف آئی اے سنتھیا رچی کو پاکستان بدر کرنے میں ناکام رہی ہے،

ایف آئی اے اپنے فرائض سرانجام دینے میں ناکام رہے جبکہ قانوناً کاروائی کے پابند ہے،

سنتھیا ڈان رچی نے کہا ہے کہ وہ پاکستان میں مختلف تفتیشی سرگرمیوں کر رہی ہے۔

حکومت پاکستان کی جانب سے سنتھیا رچی کو تفتیش کرنے کا کوئی لائسنس جاری نہیں کیا گیا ہے،

باوسوق ذرائع نے بتایا کہ سنتھیا رچی ریاست مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہے،

آئی ایس پی آر سنتھیا رچی سے کسی قسم کے تعلق کی تردید کر چکا ہے،

اگرسنتھیا رچی پر پابندی نہیں لگائی گئی تو وہ ملکی مفاد کیلئے شدید نقصان دہ ثابت ہوگی،

تمام غیر ملکی شہریوں پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ پولیس میں اپنا اندراج کروائیں،

غیر ملکی شہری جہاں رہائش پذیر ہو اس کے بارے میں بھی قریبی پولیس کو آگاہ کرنا ہوتا ہے،

سنتھیا ڈان رچی نے مسلسل رہائش بدلتی ہے اور کبھی پولیس کو مطلع نہیں کیا ہے،

سنتھیا رچی پاکستان میں کبھی ایک تو کبھی دوسرے کاروبار کا دعوہ کر رہی ہے،

سنتھیا ڈان رچی کا پاکستان میں اگر کوئی کاروبار ہے تو اسے ایس ای سی پی کے ساتھ رجسٹرڈ کیوں نہیں ہے؟

بغیر رجستڑیشن کا سنتھیا رچی پاکستان میں کونسا، کسطرح اور کیسے کاروبار کررہی ہے؟

سنتھیا رچی نے کہیں بھی اپنی آمدنی کے ذرائع اور انکم ٹیکس کی تفصیلات ظاہر نہیں کئے ہیں،

سنتھیا رچی نے ملک کے ایک سابق وزیر اعظم کے خلاف بھی بیہودہ و منگھڑت الزامات عائد کئے ہیں،

الزامات در الزامات لگا کر سنتھیا رچی بین الاقوامی سطح پر پاکستان کی ساکھ کو پامال کررہی ہے،

چونکہ سنتھیا رچی کا ویزا ختم ہوچکا ہے لہذا اسے فوری طور پر پاکستان بدر کیا جائے،

ان لوگوں کے خلاف بھی کارروائی کی جائے جو اپنے فرائض منصبی میں ناکام رہے،

ایف آئی اے اور سیکیورٹی اینڈ ایکسچینج آف پاکستان قانون کے مطابق اپنے فرائض سرانجام دینے میں ناکام رہے ہیں،

پیپلز پارٹی ک سنتھیا رچی کے پاکستان میں مصروفیات پر شدید تشویش ہے، لطیف کھوسہ

پیپلز پارٹی کا مطالبہ ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے سنتھیا رچی کو تحویل میں لیکر تفتیش کرے، لطیف کھوسہ

کس قانون کے تحت سنتھیا رچی پاکستان پیپلز پارٹی کیخلاف تحقیقات میں مصروف عمل ہے، لطیف کھوسہ