سندھ کے وزیر بلدیات سعید غنی سے چینی قونصل جنرل کی ملاقات میں کیا کہا اور سنا گیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کراچی(اسٹاف رپورٹر) وزیربلدیات سندھ سعیدغنی سے چائنیز قونصل جنرل برائے کراچی وانگ یو نے ملاقات کی۔ اس موقع پر وائس قونصل جنرل (پروٹوکول) لیو یوآن لی اور دیگر بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔ ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال، بالخصوص کراچی سمیت صوبہ سندھ میں جاری ترقیاتی کاموں، مختلف جاری منصوبوں اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے دوران صوبائی وزیر بلدیات سعید غنی نے چائنیز قونصل جنرل کو پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت کی جانب سے صوبے بھر میں جاری مختلف ترقیاتی منصوبوں، محکمہ بلدیات کے تحت جاری ترقیاتی کاموں اور صفائی ستھرائی سمیت دیگر کے حوالے سے آگاہ کیا۔ چائینز قونصل جنرل نے صوبائی وزیر کی جانب سے کی جانے والی کاوشوں اور بالخصوص محکمہ بلدیات میں ان کے وزیر بننے کے بعد ہونے والے ترقیاتی کاموں پر انہیں سراہا اور انہیں یقین دہانی کرائی کہ چائنا اور اس کے سرمایہ کار صوبہ سندھ میں مختلف منصوبوں میں پہلے ہی سرمایہ کاری کررہے ہیں اور مزید صوبائی منصوبوں میں بھی سرمایہ کاری کے خواہ ہیں۔قبل ازیں وزیربلدیات سندھ سعیدغنی سے سائٹ سپر ہائی وے ایسوسی ایشن آف انڈسٹری کراچی کے صدر راجہ محمد الیاس اور جنرل سیکرٹری ندیم احمد جبکہ کراچی گڈز ٹرانسپورٹ کیئرئیر ایسوسی ایشن کے صدر رانا محمد اسلم کی صدارت میں وفد نے ملاقات کی۔ ملاقات میں ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری غلام محمد آفریدی، سنئیر نائب صدر ملک شیر خان، مزدور رہنماء اور اسٹیٹ بینک ڈیموکریٹک کے صدر لیاقت شاہی سمیت دیگر نے ملاقات کی۔ سائٹ سپر ہائی وے ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کے دوران ایسوسی ایشن کے صدر راجہ محمد الیاس نے ایسوسی ایشن کو درپیش مسائل بالخصوص پانی اور سیوریج کے حوالے سے مختلف امور سے انہوں نے صوبائی وزیر کو آگاہ کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر بلدیات سعید غنی نے کہا کہ ہماری پوری کوشش ہے کہ ہم ہماری صنعتی زونز کو پانی کی فراہمی کو زیادہ سے زیادہ یقینی بنائیں تاہم کراچی میں پانی کی طلب اور رسد میں 50 فیصد کمی کے باعث ہماری پہلی ترجیع رہائشی علاقوں کو پانی کی فراہمی ہے البتہ اس کے باوجود ہم نے مختلف ذرائع سے ہماری صنعتوں کو پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے اقدامات کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کے فور اور ایس تھری منصوبوں پر کام کررہی ہے تاہم اس میں وفاق کی جانب سے تعاون نہ ہونے کے باعث مشکلات کا سامنا ہے لیکن ہم ان دونوں منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے۔ کراچی گڈز کئیرئیر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کے دوران ایسوسی ایشن کے صدر رانا محمد اسلم نے صوبائی وزیر بلدیات کی جانب سے ٹرانسپورٹ برادری کے لئے کی جانے والی کاوشوں بالخصوص ہاکس بے ٹرک اسٹینڈ اور اس کے اطراف صفائی ستھرائی سمیت دیگر میں ان کی ذاتی دلچسپی لینے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ وفد نے صوبائی وزیر کو ہاکس بے ٹرک اسٹینڈ پر بڑھتے ہوئے تجاوزات کے خاتمے کی استدعا کی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وہ اس سلسلے میں مئیر کراچی اور متعلقہ ڈی ایم سی کے افسران کو اس سلسلے میں ہدایات دیں گے۔ وفد نے صوبائی وزیر کو اپنے دفتر کے دورے کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد ہی ان کے دفتر کا دورہ کریں گے۔ بعد ازاں صوبائی وزیر بلدیات میٹرول میں مبینہ طور پر پولیس کے ہاتھوں جاں بحق ہونے والے بابو کریم کے گھر پہنچیں اور ان کے بیٹوں عزیز خان اور امین خان سے ان کے والد کی وفات پر ان سے تعزیت کی۔ اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی اور ضلع غربی کے پیپلز پارٹی کے ضلعی صدر لیاقت آسکانی، جنرل سیکرٹری علی احمد، پی ایس 93 کے عبدالرحمان، احمد بھائی اور دیگر بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔ صوبائی وزیر نے بابو کریم کے بیٹوں سے ان کے والد کی وفات پر تعزیت کی اور فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کی مکمل تحقیقات کرائی جائیں گی اور اس میں جو کوئی بھی ملوث ہوا چاہے وہ پولیس والے ہی کیوں نہ ہو ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ سعید غنی نے کہا کہ اس واقعہ پر وزیر اعلیٰ سندھ نے بھی نوٹس لیا ہے اور اب تک کی کی جانے والی کارروائیوں سے وہ لمحہ بہ لمحہ آگاہی لے رہے ہیں۔ بعد ازاں صوبائی وزیر بلدیات نے سنئیر مزدور رہنماء سلیمان سیلیا کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔ نماز جنازہ میں وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر وقار مہدی، راشد ربانی، عبدالقادر پٹیل، نجمی عالم، تیمور سیال، یوسف ناز، محمد اسماعیل لالپوریہ سمیت سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں