نالوں، قدرتی طوفان کے پانی کی ڈی سلٹنگ، صفائی ستھرائی اور مرمت کیلئے مفصل پلان پر عمل کریں تاکہ وقت پر فنڈز جاری کیے جاسکیں۔ – سندھ سید مراد علی شاہ

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے محکمہ بلدیات کو ہدایت کی ہے کہ وہ نالوں، قدرتی طوفان کے پانی کی ڈی سلٹنگ، صفائی ستھرائی اور مرمت کیلئے مفصل پلان پر عمل کریں تاکہ وقت پر فنڈز جاری کیے جاسکیں۔ میں چاہتا ہوں کہ برساتوں کے ہنگامی منصوبے کا جائزہ لیتے ہوئے تمام ڈی سیز، لوکل باڈیز اور واٹر بورڈ کو آن بورڈ لیا جائے تاکہ مکمل اور حتمی کارروائی کی جاسکے۔ یہ بات انہوں نے وزیراعلیٰ ہاؤس میں مون سون برساتوں کے ہنگامی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں وزیر بلدیات ناصر شاہ، چیف سکریٹری ممتاز شاہ، وزیراعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو، کمشنر کراچی افتخار شہلوانی، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ روشن شیخ، سیکرٹری خزانہ حسن نقوی، ایم ڈی واٹر بورڈ اسد اللہ خان اور دیگر متعلقہ افراد نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز اور لوکل بورڈ کے نمائندے ، میئرز / چیئر مین ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شامل ہوئے۔ میئر کراچی نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ انہیں نالوں کی ڈی سلٹنگ کرنے کیلئے مالی بحران کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس پر وزیراعلیٰ سندھ نے میئر کو مشورہ دیا کہ کے ایم سی کے مالی وسائل میں اضافہ کریں تاہم حکومت سندھ نالوں کی فنانس ڈی سلٹنگ کی کمی پورا کرے گی۔ وزیراعلیٰ سندھ نے سکریٹری لوکل گورنمنٹ روشن شیخ کو ہدایت کی کہ وہ انہیں سیکرٹری خزانہ کے ذریعے مالی ضروریات سے متعلق آگاہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ آپ کو آج ایک سمری منتقل کرنا ہوگی تاکہ بروقت کارروائی کی جاسکے۔ مراد علی شاہ نے کہا کہ ورلڈ بینک کے 11ملین ڈالر کے منصوبے پائپ لائن میں ہیں اور شاید اگلے 4ماہ میں یہ کام شروع ہوجائے گا جس کے تحت کراچی کے تقریبا تمام بڑے نالوں کو دوبارہ تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا ہم نالوں کے آس پاس باڑ لگائیں گے تاکہ تجاوزات نہ ہوسکیں اور شہر کی تقریبا تمام نئی تعمیر شدہ بڑی سڑکوں میں طوفانی پانی کے نالے شامل ہیں لہذا انہیں یقین ہے کہ بارش کا پانی خارج ہوجائے گا اگر ان کے متعلقہ نالے جس میں وہ [نالیاں] خارج ہوتی ہیں تو اسے صاف اور ڈی سلٹ کردیا جائے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ کراچی ، حیدرآباد اور سکھر میں مختلف نالوں کے کچھ سول کاموں کی ضرورت ہے۔ سکریٹری لوکل گورنمنٹ نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ تمام متعلقہ ڈپٹی کمشنرز کو آن بورڈ لے کر انہوں نے وزیراعلیٰ سندھ کو229 ملین روپے کی سمری ارسال کی ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے میئر اور کمشنر کراچی کو ہدایت کی کہ گذشتہ سال جیسی صورتحال جیساکہ سعدی ٹاؤن میں ہوا تھا اس سے بچنے کیلئے کوئی لائحہ عمل تیار کریں۔ انہوں نے میئر کراچی کو ہدایت کی کہ وہ مہران نالہ پر جاری کام کو تیز کریں تاکہ دوبارہ بہاؤ نہ ہونے پائے اور سعدی ٹاؤن میں تباہی ہو۔ مراد علی شاہ نے کمشنر کراچی کو کراچی واٹر بورڈ کے پمپنگ اسٹیشنوں کو مناسب اور بلاتعطل بجلی کی فراہمی کیلئے کے الیکٹرک کے حکام سے رابطہ کرنے کی بھی ہدایت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تمام ڈپٹی کمشنر سکشن مشینوں ، جنریٹرز ، پائپز وغیرہ کی اپنی ضرورت پیدا کریں گے اور پی ڈی ایم اے کو بھیجیں گے تاکہ وہ اس کے مطابق بندوبست کرسکیں۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ مون سون کے آغاز سے قبل ہورڈنگز ، غیر ضروری کیبلز اور اس طرح کے دیگر ڈسپلے بورڈ کو ہٹا دیا جائے گا ۔
حیدرآباد:
کمشنر حیدرآباد نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ واسا اور حیسکو کو برساتوں کی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے 70 ملین روپے درکار ہیں۔ منصوبا بندی کے کاموں کے تحت 7نالوں کو خالی ، صاف اور مرمت کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ وہ جولائی کے پہلے ہفتے میں فنڈز جاری کریں گے تاہم انہوں نے کمشنر کو کام شروع کرنے کی ہدایت دی ۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ ساتوں نالوں پر کام ایک ساتھ شروع کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ واسا کی پمپنگ مشینوں کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے حیسکو کو تیار رہنا ہے تاکہ بارش کا پانی خارج ہوسکے۔ انہوں نے کمشنر حیدرآباد کو ہدایت کی کہ وہ ڈپٹی کمشنر اور دیگر محکموں کے ساتھ جنریٹرز کی مرمت و بحالی اور موجود پمپنگ مشینیں کو یقینی بنائیں تاکہ وہ ہنگامی صورت حال میں استعمال ہوسکیں۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ واسا کے پاس بجلی کے بلوں کی ادائیگی کے کچھ معاملات ہیں اور اس کیلئے اضافی عملہ کی ضرورت ہے۔ اس پر وزیراعلیٰ سندھ نے وزیر بلدیات سید ناصر شاہ کو حیدرآباد کا دورہ کرنے اور ان کے تمام بقایا جاتی امور کو حل کرنے کی ہدایت کی۔
شہید بینظیر آباد:
وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ نشیبی علاقوں کی نشاندہی کی گئی ہے جہاں زیادہ تر بارش کا پانی جمع ہوتا ہے۔ نالوں اور قدرتی نالیوں کی ڈی سلٹنگ شروع کردی گئی ہے اور تقریبا 70 فیصد کام ہوچکا ہے۔ اس پر وزیراعلیٰ سندھ نے شہید بینظیر آباد انتظامیہ کو ہدایت کی کہ مون سون قریب آرہا ہے تو اس کام کو تیز کیا جائے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ ڈی واٹرنگ پمپوں کا ایک اچھا ذخیرہ شہید بینظیر آباد ڈویژن کی ضلعی انتظامیہ کے پاس موجود ہے۔
میرپورخاص:
وزیراعلیٰ سندھ نے کمشنر میرپورخاص کو ہدایت کی کہ وہ میونسپل اور ٹاؤن کمیٹیاں نالوں اور سیوریج نظام کی صفائی پر توجہ دیں۔ جہاں تک برسات کے پانی کا تعلق ہے تو وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ قدرتی نالے متانت کے ساتھ بہتے رہتے ہیں۔ انہوں نے محکمہ آبپاشی کو ہدایت کی کہ برسات کے پانی کے مناسب بہاؤ کیلئے ایل بی او ڈی کے آس پاس کے علاقوں کو صاف کریں۔
سکھر:
کمشنر سکھر نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ وہ شہر کے تمام نالوں کو ڈی سلٹنگ کر رہے ہیں اور بارش کے پانی کو صحیح طریقے پر خارج کردیا جائے گا تاہم انہوں نے قربانی کے جانوروں کے لئے مویشی کالونیوں کے قیام کے معاملے کی نشاندہی کی۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ میں کہیں بھی مویشی کالونی نہیں ہوگی اس سے متعلق انہوں نے چیف سکریٹری کو ضروری ہدایات جاری کرنے کا حکم دیا۔ انہوں نے ضلعی انتظامیہ کو قربانی کے جانوروں کی منڈی کیلئے ایک متبادل منصوبہ وضع کرنے کی ہدایت بھی کی۔
لاڑکانہ:
کمشنر اور میئر لاڑکانہ نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ وہ طوفان کے پانی کے نالوں کی مرمت کر رہے ہیں اور امید ہے کہ شہر میں برساتی پانی نہیں ہوگا۔ مراد علی شاہ نے ان پر زور دیا کہ وہ ریشم گلی، کوسر مل ایریا، مراد وہان اور دیگر نشیبی علاقوں کو بچانے کیلئے مناسب تیاری کریں۔
عبدالرشید چنا
میڈیا کنسلٹنٹ وزیراعلیٰ سندھ